اتراکھنڈ میں کسی بھی مذبحہ خانے کی منظوری نہیں دیں گے :بھارت کے ریاستی وزیراعلیٰ کا اعلان

اتراکھنڈ میں کسی بھی مذبحہ خانے کی منظوری نہیں دیں گے :بھارت کے ریاستی ...
اتراکھنڈ میں کسی بھی مذبحہ خانے کی منظوری نہیں دیں گے :بھارت کے ریاستی وزیراعلیٰ کا اعلان

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

منگلور(این این آئی)بھارتی ریاست اتراکھنڈ کے انتہا پسند وزیر اعلی ترویندر سنگھ راوت نے کہا ہے کہ ریاست میں کسی بھی سلاٹر ہاوس کی منظوری نہیں دی جائے گی۔

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ریاستی وزیراعلیٰ راوت نے کہا کہ 2016 میں منگلور میں سلاٹر ہاوس کی اجازت دی گئی تھی لیکن اب  ہری دوار کے ضلع مجسٹریٹ کو اسکی منسوخی کی ہدایت دیدی گئی ہے ، ریاست میں کسی کو بھی اس قسم کے لائسنس جاری نہیں کئے جائیں گے جبکہ جن کے پاس پہلے سے لائسنس موجود  ہیں، وہ بھی منسوخ کئے جائیں گے۔راوت نے کہا کہ ریاست میں گائے کے تحفظ کے لئے دہرادون، ہریدوار اور ادھم سنگھ نگر میں خصوصی دستے ترتیب دیئے گئے ، رشی کیش میں قائم کی جانے والی سارٹیڈ سیمن لیبارٹری ملک کی پہلی ایسی لیبارٹری ہے جس کے قیام سے جانوروں کی نشوونما بہتری آئے گی ساتھ ہی مویشی کے کاروباراضافہ ہوگا۔

وزیر اعلی نے کہا کہ ریاست میں بی جے پی حکومت کے دور میں کاو پروٹیکشن ایکٹ نافذ کیا گیاتھا۔ انہوں نے کہا کہ ریاستی حکومت کی کوشش ہے کہ 2021 سے پہلے ایسا بندوبست کر لیا جائے، جس سے گائے سڑکوں پر آوارہ نہ گھومے بلکہ کسانوں کے معیار زندگی کی بہترین معاون ثابت ہو۔

مزید : بین الاقوامی