زمین کی فروخت میں کروڑوں روپے ہتھیالیے گئے

  زمین کی فروخت میں کروڑوں روپے ہتھیالیے گئے

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر)خیرمحمد گوٹھ کے رہائشی محمد امین نے الزام عائد کیا ہے کہ یار محمد گوٹھ میں واقع 44ایکڑ زمین کی قیمت ادا کرنے کے باوجود اسے بااثر افراد کی جانب سے تاحال قبضہ اور کاغذات نہیں دیئے جارہے ہیں۔اعلیٰ حکام سے اپیل ہے کہ وہ معاملے کا نوٹس لیں۔تفصیلات کے مطابق کراچی کے خیرمحمد گوٹھ میں رہائشی محمد امین نے اعلیٰ حکام درخواست ارسال کی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ اس نے یار محمد گوٹھ میں بروہی اسٹیٹ کے توسط سے 44ایکڑ زمین 3کروڑ 50لاکھ روپے میں خریدنے کا معاہدہ کیا اور ایک کروڑ 60لاکھ روپے زمین کے مالک محمد اسلم کو ادا کردیئے۔زمین کے مالک نے یقین دہانی کرائی تھی کہ 90روز میں این او سی اسے دے دیا جائے گا تاہم اب اس نے ہمیں ایک کاغذ فراہم نہیں کیا ہے اور نہ ہی ہماری رقم واپس کررہا ہے۔انہوں نے گورنر سندھ۔وزیراعلیٰ،آئی جی سندھ،ایڈیشنل آئی کراچی،ایس ایس پی ویسٹ،ڈپٹی کمشنر اور دیگر حکام سے اپیل کی ہے کہ اس کی ر قم واپس دلانے کے لیے قانونی کارروائی کی جائے۔

مزید :

صفحہ آخر -