پنجاب‘کھادوں اور بیجوں پر سبسڈی کی فراہمی جاری

  پنجاب‘کھادوں اور بیجوں پر سبسڈی کی فراہمی جاری

  

 لاہور (سٹی رپورٹر) محکمہ زراعت پنجاب کے مطابق حکومت پنجاب کاشتکاروں کو سمارٹ سبسڈی اور وزیر اعظم پاکستان کے زرعی ایمرجنسی پروگرام کے تحت فاسفورسی،پوٹاش کھادوں اور گندم، کپاس، دھان،سورج مکھی،کینولہ،مونگ اور تل کے بیجوں پر سبسڈی فراہم کر رہی ہے۔ان تمام سکیموں کے لئے فنڈز کی دستیابی موجود تھی تاہم کاشتکاروں کی طرف سے کسی خاص مطبوع میں اضافے کے مطالبہ کی وجہ سے فنڈز میں وقتی قلت دیکھی گئی اور اس قلت کا بروقت ازالہ عمل میں لایا گیا۔سبسڈی کی مانیٹرنگ کی گئی ہے اور پنجاب لینڈ ریکارڈ اتھارٹی سے کمپیوٹررائزڈ ریکاڈ کے حامل کاشتکار وں کو فوری ادائیگی کی گئی جبکہ باقی ماندہ کاشتکاروں کو سبسڈی کے واؤچر کی تصدیق کے بعدجلد ادائیگی کا عمل جاری ہے۔ترجمان نے مزید بتایا کہ صوبہ پنجاب میں مالی سال 2019-20کے دوران ای واؤچر پر مبنی سمارٹ سبسڈی سکیم کے ذریعے 3 لاکھ50 ہزار کاشتکار کھادوں اور 1 لاکھ کاشتکار بیجوں کی سبسڈی سے مستفید ہوئے ہیں اور ان سبسڈی سکیموں کے تحت اب تک 2 ارب8 کروڑ90 لاکھ روپے کی ادائیگی عمل میں لائی جا چکی ہے۔ترجمان محکمہ زراعت پنجاب نے بتایا کہ ڈائریکٹر جنرل زراعت (توسیع) پنجاب ڈاکٹر محمد انجم علی کی طرف سے واضح ہدایات جاری کی گئی ہیں کہ واؤچرز کی تصدیق کے عمل میں تاخیر یا کوتاہی ہر گز برداشت نہیں کی جائے گی اور ایسا کرنے والے متعلقہ ڈائریکٹر یا ڈپٹی ڈائریکٹر زراعت (توسیع) کے خلاف کاروائی عمل میں لائی جائے گی۔ ترجمان محکمہ زراعت پنجاب نے کاشتکاروں سے بھی اپیل کی ہے کہ اپنے غیر ادا شدہ واؤچرز کی تصدیق محکمہ زراعت کے مقامی افسران و عملہ سے جلد کرالیں تاکہ تصدیق کے بعد سبسڈی کی رقم کی ادائیگی جلد از جلد کی جا سکے۔ 

 ٭٭٭٭

مزید :

کامرس -