پشاور، سرکاری آٹا بلیک میں فروخت کرنے پر 9لائسنس منسوخ 

    پشاور، سرکاری آٹا بلیک میں فروخت کرنے پر 9لائسنس منسوخ 

  

پشاور(سٹی رپورٹر)محکمہ خوراک نے سرکاری آٹا بلیک میں فروخت کرنے پر 9 ڈیلرز کے لائسنس منسوخ کردیئے۔ تفصیلات کے مطابق محکمہ خوراک کے اعلی حکام کی ہدایت پر راشننگ کنٹرولر پشاور آفتاب عمر کی زیر نگرانی اسسٹنٹ فوڈ کنٹرولرز  تسبیح اللہ' نعمان عامر  اور فوڈ انسپکٹر محسن علی شاہ نے پشاور کے مختلف علاقوں میں قائم مہمند فلور مل  پشاورفلور مل نیو پشاور فلور مل۔شبقدر فلور مل۔قریشی فلور مل اور آدم فلور مل سمیت دیگر فلور ملوں کے دورے کئے اور فلور ملوں سے آٹے کے نمونے حاصل کر کے لیبارٹری ارسال کئے جبکہ بعد ازاں مختلف علاقوں میں قائم ڈیلرز میں آٹے کے نرخوں سے متعلق آگاہی حاصل کی جہاں پر 9 ڈیلرز سرکاری نرخنامے سے تجاوز کر رہے تھے جن کے کوٹے اور لائسنس کو منسوخ کردیا گیا۔ واضح رہے کہ محکمہ خوراک کی جانب سے بہتر حکمت عملی اور بروقت فلور ملوں کو گندم کی ترسیل کے باعث پنجاب سے آنے والے  سپیشل آٹا فائن آٹا سپر فائن آٹا کی قیمتوں میں ستر روپے تک کمی آگئی ہے۔ راشننگ کنٹرولر پشاور آفتاب عمر نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ سرکاری نرخ کے مطابق آٹے کی فراہمی یقینی بنانے کے لئے تمام تر صلاحیتیں بروئے کار لا رہے ہیں جبکہ سرکاری نرخنامے سے تجاوز کرنیوالوں کے ساتھ کسی قسم کی نرمی نہیں برتی جائیگی۔ انہوں نے مزید کہا کہ شہری گرانفروشی کرنیوالوں کی نشاندہی کریں جن کے خلاف سخت قانونی کارروائی عمل میں لائی جائیگی۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -