خطے میں دیر پار امن اور استحکام افغانستان میں قیام امن سے مشروط:شاہ محمود قریشی 

خطے میں دیر پار امن اور استحکام افغانستان میں قیام امن سے مشروط:شاہ محمود ...

  

   اسلام آباد (سٹاف رپورٹر)پاکستان میں تعینات افغان سفیر عاطف مشعل  نے وزارت خارجہ میں وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی سے الوداعی ملاقات کی ،دونوں رہنماؤں کے درمیان پاک افغان تعلقات اور خطے میں قیام امن  سمیت دو طرفہ باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا گیا،وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ خطے میں دیرپا امن و استحکام، افغانستان میں قیام امن سے مشروط ہے۔بین الافغان مذاکرات سے افغانستان میں دیر پا امن کی راہ ہموار ہو گی۔پاکستان، افغان امن عمل سمیت خطے میں امن و استحکام کیلئے اپنا مصالحانہ کردار ادا کرتا رہے گا۔افغان سفیر عاطف مشعل نے نیک خواہشات کے اظہار پر وزیر خارجہ کا شکریہ ادا کیا۔ وزیرِ خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی اور امریکی نائب وزیرِ خارجہ ڈیوڈ ہیل کے درمیان ٹیلی فونک رابطہ ہوا ہے۔امریکی محکمہ خارجہ کے مطابق ڈیوڈ ہیل اور شاہ محمود قریشی نے گفتگو کے دوران دہشت گردی اور انتہا پسند گروہوں کے خلاف جاری تعاون، علاقائی استحکام اور دیگر امور پر تبادلہ خیال کیا۔امریکی محکمہ  خارجہ کے مطابق وزیرِ خارجہ شاہ محمود قریشی سے نائب سیکرٹری آف اسٹیٹ کی تعمیری بات چیت ہوئی۔امریکی اسٹیٹ ڈپارٹمنٹ کا کہنا ہے کہ دونوں رہنماؤں نے علاقائی استحکام اور معاشی نمو کو فروغ دینے پر تبادلہ خیال کیا۔چین میں پاکستانی سابق سفیر نغمانہ ہاشمی  نے بھی شاہ محمود قریشی سے ملاقات کی۔ ملاقات کے دوران پاک چین تعلقات سمیت باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔وزیر خارجہ نے چین میں بطور سفیر نغمانہ ہاشمی کی خدمات کو سراہا۔ وزیر خارجہ نے کہا کہ پاکستان اور چین کی موجودہ قیادت دوطرفہ مثالی تعلقات کو مزید فروغ دینے کیلئے پرعزم ہے۔ انہوں نے کہا کہ کورونا وائرس کی عالمگیر وبا میں چین نے جس طرح اپنے تجربات کی روشنی میں مختلف ممالک بالخصوص پاکستان کی معاونت کی وہ قابلِ ستائش ہے۔شاہ محمود قریشی نے کہا کہ دونوں ممالک پاک چین اقتصادی راہداری کے دوسرے مرحلے سے متعلقہ منصوبوں کی جلد تکمیل کیلئے کوشاں ہیں۔وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے ازبکستان کے وزیر خارجہ عبدالعزیز کامیلوف کے ساتھ بذریعہ ویڈیو لنک رابطہ کیا جس میں کرونا عالمی وبائی صورتحال،دو طرفہ تعلقات سمیت باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔  شاہ محمود قریشی نے کہاکہ پاکستان اور ازبکستان کے مابین دو طرفہ گہرے برادرانہ مراسم ہیں ؎ انہوں نے کہاکہ دونوں ممالک کی قیادت مختلف شعبہ جات میں دو طرفہ تعاون کے فروغ کیلئے پر عزم ہے۔وزیر خارجہ نے کرونا وبائی چیلنج سے نمٹنے کے لئے پاکستان کی طرف سے اٹھائے گئے موثر اقدامات سے ازبک ہم منصب کو آگاہ کیا۔وزیر خارجہ نے اس عالمی وبا کے دوران، تاشقند سے پاکستانی شہریوں کی وطن واپسی کیلئے خصوصی معاونت پر ازبک وزیر خارجہ کا شکریہ ادا کیا۔ شاہ محمود قریشی نے کہاکہ پاکستان اور ازبکستان کے مابین دو طرفہ سیاسی مشاورتی اجلاس،وبائی صورت حال معمول پر آنے کے بعد جلد اسلام آباد میں منعقد ہو گا۔ انہوں نے کہاکہ دونوں وزرائے خارجہ نے دو طرفہ تجارت کے فروغ اور زیر_التواء  یادداشتوں /دو طرفہ معاہدوں پر جلد دستخط کرنے پر اتفاق کیا۔وزیر خارجہ نے اپنے ازبک ہم منصب کو بھارت کی جانب سے، مقبوضہ جموں و کشمیر میں جاری انسانی حقوق کی مسلسل خلاف ورزیوں سے آگاہ کیا۔

شاہ محمود

مزید :

صفحہ اول -