حکومت15اگست سے تعلیمی ادارے کھونے کااعلان کرے، پرائیویٹ سکولز فیڈریشن 

حکومت15اگست سے تعلیمی ادارے کھونے کااعلان کرے، پرائیویٹ سکولز فیڈریشن 

  

 ملتان (سپیشل رپورٹر) آل پاکستان پرائیویٹ سکولز فیڈریشن اور ساؤتھ پنجاب پرائیویٹ سکولز ایسوسی ایشن کے زیر اہتمام اہم پر یس کا نفر نس  منعقد ہوئی جس میں ملک بھر سے تمام اتحادی تنظیموں نے شرکت کی۔ پر یس کا نفر نس میں کاشف مرزا (صدر آل پاکستان پرائیویٹ سکولز فیڈریشن) اور جاوید اقبال (صدر ساؤتھ پنجاب پرائیویٹ سکولز ایسوسی ایشن) نے کی(بقیہ نمبر56صفحہ7پر)

۔اجلاس میں شریک دیگر اہم رہنماؤں میں محمد اختر آرائیں (صدر سندھ آل پاکستان پرائیویٹ سکولز فیڈریشن)، محمد یسٰین رامے (صدر پرائیویٹ سکولز ایسوسی ایشن رحیم یار خان)، خواجہ محمد شفیق (مرکزی چیئرمین آل پاکستان انجمن تاجران)،منزہ نعمان،  ثوبیہ خلیل، بلال احمد بھٹہ،زمان خان اعوان، ثاقب یونس، محمد فیصل عارف، جویریہ شاہد، طاہرہ شمیم، راؤ محمد اکرم، سعید جعفری، ملک الطاف، درخشاں سراج، حسیب نیازی و دیگر شامل ہیں۔تمام اتحادی تنظیموں سے مشاورت کے بعد مشترکہ اعلامیہ کے مطابق تعلیمی ادارے 14 ستمبر 2020ء  تک بند رکھنے کے حکومتی فیصلہ کو مسترد کر دیا گیا۔ کاشف مرزا (صدر آل پاکستان پرائیویٹ سکولز فیڈریشن) نے کہا کہ حکومت 15 اگست 2020ء سے SOPs کے تحت دیگر شعبہ جات کی طرح تمام تعلیمی ادارے کھولنے کا اعلان کرے بصورت دیگر پرائیویٹ تعلیمی ادارے ازخود تعلیمی ادارے کھولنے کا اعلان کرنے پر مجبور ہیں۔ گیلپ سروے کے مطابق 74%  والدین سکولز فوری کھولنے کے حق میں ہیں اور WHO کی ایڈوائزری کے مطابق کوروناسے  36 لاکھ بچوں میں سے صرف 1 کے متاثرہونے کا خدشہ ہے۔ 7.5  کروڑ پاکستانی بچے اپنے آئینی حق سے محروم ہیں جن میں سے 50% سے زائد تعداد لڑکیوں کی ہے۔ تعلیمی نقصان کا ازالہ ناممکن ہے۔ تعلیم ہر بچے کا حق ہے اور تعلیم کی فراہمی آرٹیکل 25(a) کے تحت ریاست کا آئینی فریضہ ہے۔ نجی سکولز کا معاشی قتل کیا جا رہا ہے۔تعلیمی اداروں کی بندش سے 50%  تعلیمی ادارے مکمل بند اور 10 لاکھ سے زائد لوگ بے روز گار ہو گئے ہیں۔حکومت شعبہ تعلیم کو تباہ کر رہی ہے او ر حکومت کی تعلیم دشمن پالیسیوں کی وجہ سے چائلڈ لیبر کے رجحان میں خطرناک حد تک اضافہ ہوگیا ہے۔جاوید اقبال (صدر ساؤتھ پنجاب پرائیویٹ سکولز ایسوسی ایشن) نے تعلیم کی اہمیت کو اجاگر کرتے ہوئے کہا کہ تعلیم قوموں کی ترقی کا راز ہے اور کوئی بھی قو م تعلیم کو اہمیت دیئے بغیر ترقی نہیں کر سکتی۔ موجودہ صورت حال میں تعلیم کا ضیاع ملک وقوم کو تعلیمی پسماندگی کی طرف لے کر جا رہا ہے۔ حکومت تمام تعلیم دشمن پالیسیوں کو ترک کرے اور پرائیویٹ تعلیمی اداروں کی تعلیم کے فروغ کے لئے کاوشوں کو تسلیم کرے اور تعلیم دوستی کا ثبوت دے۔ سکولوں کی بندش سے طلباء کا تعلیمی سال ضائع ہونے کا اندیشہ ہے۔  جس کا ازالہ ناممکن ہے۔اپر یس کا نفر نس میں شریک دیگر تمام شرکاء نے تمام فیصلوں کی بھرپور تائیدکی۔

اعلان

مزید :

ملتان صفحہ آخر -