ضلع مہمند،بل ادائیگی کے باوجود کرش پلانٹ کی بجلی منقطع،مزدوروں کا احتجاج

ضلع مہمند،بل ادائیگی کے باوجود کرش پلانٹ کی بجلی منقطع،مزدوروں کا احتجاج

  

 مہمند(نمائندہ پاکستان)بل ادائیگی کے باوجود کرش پلانٹ کی بجلی بند کرنے کے خلاف مالکان اور مزدوروں کا شدید احتجاج۔درجنوں متاثرین نے غلنئی واپڈا ایکسن دفتر آکر احتجاج کیا۔ہماری بجلی بحال نہ ہوئی تو بجلی لائن کاٹ کر سارے علاقے کے بجلی معطل کرینگے. مظاہرین کی دھمکی۔تفصیلات کے مطابق قبائلی ضلع مہمند تحصیل حلیمزئے شاتی کور کرش پلانٹ مالکان اور درجنوں مزدوروں نے بدھ کے روز ہیڈکوارٹر غلنئی ایکسن واپڈا آفس کے سامنے احتجاج کیا۔جس سے خطاب کرتے ہوئے کرش پلانٹ مالک رحمن اللہ نے بتایا کہ انہوں نے تین 3 کروڑ روپے سرمایہ لگا کر تحصیل حلیمزئے شاتی کور میں کرش پلانٹ لگایا ہے۔جس سے درجنوں مقامی مزدوروں اور ڈمپر گاڑیوں کے ڈرائیور حضرات اور کنڈیکٹروں کا معاشی پہیہ چل رہا ہے۔مگر واپڈا مہمند کی لاپرواہی کی وجہ سے ماربل فیکٹری کا مالک ان کے بجلی کاٹنے میں ملوث ہے۔کیونکہ ہر ماہ پانچ روز کرش پلانٹ کی فیڈر پر بجلی بند کرکے روزانہ پچاس ہزار اور ماہانہ ساڑھے تین لاکھ نقصان اٹھانا پڑتا ہے۔جبکہ روزانہ دیہاڑی دار مزدور اور ڈمپر گاڑیوں کے ڈرائیورز اور کنڈیکٹرز کام کئے بغیر شام کو خالی ہاتھ واپس گھر لوٹتے ہیں۔انہوں نے کہاں کہ کرش پلانٹ کی رجسٹریشن اور ماہانہ ایک لاکھ روپے بجلی بل جمع کرنے کے باوجود ایک سول شخص کے کہنے پر ہماری بجلی بغیر وجہ کاٹنے سے واپڈا مہمند کی نااہلی واضح ہوجاتی ہے۔انہوں نے دھمکی دی کہ اگر ہمارا جائز مسلہ مستقل طور پر حل نہ ہوا تو کرش پلانٹ مالکان، مزدوران، اور ڈمپر گاڑی مالکان علاقے کی بجلی لاء

مزید :

پشاورصفحہ آخر -