نشترکینٹین بند کرنے پر ٹھیکیدار، ایم ایس  آمنے سامنے، تلخ جملوں کا بھی تبادلہ

  نشترکینٹین بند کرنے پر ٹھیکیدار، ایم ایس  آمنے سامنے، تلخ جملوں کا بھی ...

  

ملتان (وقا ئع نگار) نشتر ہسپتال انتظامیہ کی کینٹینز کو لاکھوں روپے(بقیہ نمبر50صفحہ10پر)

 کی بقایا جات کی ادائیگی کا بہانہ بناکر زبردستی سیل کردیا گیا۔ٹھیکیدار کی مداخلت پر تین گھنٹے کے بعد دوبارہ کینٹینز کو کھول دیا۔ ذرائع سے معلوم ہوا ہے نشتر ہسپتال  انتظامیہ نے گزشتہ روز ہسپتال کے اندر واقع کینٹینز کو سیل کردیا تھا۔کیونکہ بتایا جارہا ہے کہ مذکورہ ہسپتال انتظامیہ نے کینٹین ٹھیکیدار سے 76 لاکھ روپے کی ریکوری کرنی تھی۔کیٹینز سیل ہونے کی اطلاع پر ٹھیکدار موقع پر آگیا۔بلاوجہ نشتر ہسپتال کی کیٹین بند ہونے پر ٹھیکدار اور ایم ایس ایک دوسرے کے آمنے سامنے ہوئے اور تلخ جملے کا تبادلہ ہوا۔ٹھیکدار نے رقوم کی ادائیگی کی بینک رسیدیں انتظامیہ کو دیکھائیں۔جسں کے بعد نشتر ہسپتال انتظامیہ نے فوری طور پر دوبارہ کینٹینز کھولنے کے احکامات جاری کر دیئے۔اور تین گھنٹے کے بعد کینٹینز کو کھول لیا گیا۔مزید برآں ذرائع کے مطابق نشتر ہسپتال کی پارکنگ اسٹینڈ کا ٹھیکہ ہسپتال انتظامیہ نے زبردستی ٹھیکدار سے واپس لے لیا ہے۔جس کے بعد سے پارکنگ فیس کی ریکوری ہسپتال انتظامیہ کا عملہ کر رہا ہے۔واضح رہے گزشتہ تقریبا چودہ روز سے پارکنگ فیس ہسپتال انتظامیہ وصول کر رہی ہے۔

تبادلہ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -