شہباز شریف اور مریم اورنگزیب کی بی آرٹی منصوبے پر تنقید ،ڈاکٹر شہباز گل نے ایسا کرارا جواب دے دیا کہ تمام ناقدین ایک دوسرے کا منہ تکتے رہ جائیں گے 

شہباز شریف اور مریم اورنگزیب کی بی آرٹی منصوبے پر تنقید ،ڈاکٹر شہباز گل نے ...
شہباز شریف اور مریم اورنگزیب کی بی آرٹی منصوبے پر تنقید ،ڈاکٹر شہباز گل نے ایسا کرارا جواب دے دیا کہ تمام ناقدین ایک دوسرے کا منہ تکتے رہ جائیں گے 

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن )پشاوربس ریپڈ ٹرانسپورٹ کے افتتاح کے بعد مسلم لیگ ن کی قیادت تحریک انصاف حکومت کے اس میگا پراجیکٹ پر دل کھول کر تنقید کرنے میں مصروف ہے لیکن اب وزیر اعظم کے معاون خصوصی ڈاکٹر شہباز گل بھی میدان میں آگئے ہیں اور انہوں نے اپوزیشن لیڈر میاں شہباز شریف اور ن لیگ کی ترجمان مریم اورنگزیب کو بی آر ٹی کے حوالے سے ایسا کرارا جواب دے دیا ہے کہ بی آر ٹی کےناقدین ایک دوسرے کا منہ تکتے رہ جائیں گے۔

تفصیلات کے مطابق وزیر اعظم کے معاون خصوصی ڈاکٹر شہباز گل نے پشاوربس ریپڈ ٹرانسپورٹ کے افتتاح کے بعد ن لیگ کی جانب سے ہونے والی تنقید پر کمر کس لی ہے اور مائیکروبلاگنگ ویب سائٹ پر اپوزیشن لیڈر میاں شہباز شریف کے ٹویٹ کا جواب دیتے ہوئےکہا ہے کہ 

میاں صاحب چلیں میٹرو کا موازنہ کر لیتے ہیں،بی آر ٹی سے لیکن اس کے لیے یقیناً میٹرو کا ریکارڈ چاہیے ہو گا جسے آگ لگا کر ختم کر چکے ہیں آپ، مطلب ""نہ ہو سی ڈھولا، نہ پو سی رولا ""کرائے کی بسیں بارہ ارب سالانہ سبسڈی، بی آر ٹی کی مجموعی قیمت سے زیادہ تو صرف سبسڈی دے چکے ہیں میٹرو کی۔ڈاکٹر شہباز گل نے ن لیگ کی ترجمان مریم اورنگزیب کی تنقید کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ یہ عمران خان ہے آپ کا اپنا رپورٹر عارف نہیں جو آپکے بتائے ہوئے سوال پوچھے،چھوٹی مریم جی، یہ وہی عمران خان ہیں جن کی وجہ سے جھوٹی مریم جی سائلنٹ موڈ پر،پاپا پلیٹوں سمیت لندن فرار، ببلو ڈبلو پر پاکستانی قانون نہیں لگتا،سمدھی بیس بدل کر لندن کی سڑکوں پر اورمعافی مانگیں شہباز شریف سے۔انہوں نے کہا کہ محترمہ بی آر ٹی کا افتتاح ہو چکا ہے، بلاول اور آپ سمیت سب سندھ کابینہ کو دعوت ہے کہ کے پی تشریف لائیں، کے پی حکومت انکو گائیڈ کرے گی کہ مستحکم  ماس ٹرانزٹ سسٹم کیسے کام کرتا ہے اور کیسے بنتا ہے؟کراچی کے عوام پر رحم کریں اب،مزید یہ کہ بی آر ٹی کا ریکارڈ آن لائن دستیاب ہے جلا نہیں۔

ڈاکٹر شہباز گل نےکہا کہاپنی رائے بہتر نہ ہونے کا اعتراف اور دوسروں کو ٹھیک ہونے کا کریڈٹ دینا بڑے آدمی کی نشانی ہے،آپ صبح دوپہر شام کرپشن میں لتھڑے قائدین کا جھوٹا دفاع کرتے ہوئےان اخلاقی قدروں کو نہیں سمجھ سکتیں، اس کے لیے خود بھی صاف نیت سچا و کھرا ہونا پڑتا ہے۔ڈاکٹر شہباز گل نے بی آر ٹی کے حوالے سے ایک ویڈیو شیئر کرتے ہوئے کہا کہیہ ویڈیو اُن ارسطوؤں کیلئے جوجھوٹ بولتے نہیں تھکتے کہ بی آر ٹی پشاور منصوبے کا نامکمل افتتاح ہورہا ہے؛پھر مزیدجھوٹ کہ افتتاح ہی نہیں ہورہا یاد رکھیں،بی آر ٹی گرینڈ منصوبہ جبکہ زیرو سبسڈی دوسری طرف پنجاب کے چھوٹے منصوبے اور15ارب سالانہ سبسڈی۔انہوں نے کہا کہ جو کہتے ہیں کہ ہم میٹرو بس پر تنقید کرتے تھے وہ یاد رکھیں کہ ہمیں پبلک ٹرانسپورٹ کے منصوبوں پر کبھی اعتراض نہیں رہا بلکہ ہمارا اعتراض ان منصوبوں پر دی جانے والی لامتناہی سبسڈی پر تھا ،ہماری تنقید ان منصوبوں کی sustainability پر تھی الحمدللہ بی آر ٹی پشاور خودکفیل ہے۔انہوں نے کہا کہ پشاوربی آر ٹی اور لاہور،ملتان،راولپنڈی میٹروبس میں کیافرق ہے؟ ہم بتاتے ہیں، پشاورکی تمام220بسیں اپنی جبکہ پنجاب کی سب کرائے پر بی آرٹی کا27کلومیٹر مین کوریڈور،60کلومیٹر فیڈر روٹ،3 پلازے،300دکانیں،1200گاڑیوں کی پارکنگ اورتمام سسٹم ملاکر66ارب خرچ اورسونے پرسہاگہ”زیرو سبسڈی“۔

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -