قومی ہاکی ٹیم کے لیجنڈری کھلاڑی مطیع اللہ خان84برس کی عمر میں انتقال کرگئے

قومی ہاکی ٹیم کے لیجنڈری کھلاڑی مطیع اللہ خان84برس کی عمر میں انتقال کرگئے
قومی ہاکی ٹیم کے لیجنڈری کھلاڑی مطیع اللہ خان84برس کی عمر میں انتقال کرگئے

  

 کراچی(ڈیلی پاکستان  آن لائن ) پاکستان کے لیجنڈ ہاکی کھلاڑی و اولمپیئن مطیع اللہ خان طویل علالت کے بعد دار فانی سے کوچ کرگئے ہیں،مطیع اللہ خان نے 3 اولمپکس میں پاکستان کی نمائندگی کی۔

نجی ٹی وی "ایکسپریس نیوز "کے مطابق مطیع اللہ خان  31 جنوری 1938 کو پیدا  ہوئے ،اولمپیئن لیفٹ آوٹ کی پوزیشن پر کھیلا کرتے تھے، وہ 1960 میں روم اولمپکس میں گولڈ میڈل جیتنے والی پاکستان ہاکی ٹیم کے رکن تھے جبکہ وہ ملبورن اولمپکس 1956 اور 1964 ٹویکیو اولمپکس میں کی سلور میڈلسٹ قومی ہاکی  ٹیموں کا بھی حصہ رہے۔

سابق قومی ہاکی ٹیم کے کپتان اولمپیئن سمیع اللہ خان اور اولمپئین کلیم اللہ خان کے چچا تھے، حکومت پاکستان نے   ہاکی میں گراں قدر خدمات کے اعتراف میں مرحوم کو تمغہ امتیاز سے نوازا تھا،مطیع اللہ خان  گزشتہ چند دنوں سے بہاولپور کے مقامی  ہسپتال کے انتہائی نگہداشت کے شعبہ میں داخل تھے، مطیع اللہ خان مرحوم  کو نماز جنازہ کے بعد بہاولپور میں سپرد خاک کردیا گیا۔

دریں اثنا پی ایچ ایف کے صدر بریگیڈیئر( ر) خالد سجاد کھوکھر، قائم قام سیکریٹری جنرل سید حیدر حسین اور چیئرمین سیلیکشن کمیٹی اولمپیئن منظور حسین جونیئر، سابق قومی کپتان اولمپئین اصلاح الدین صدیقی، اولمپئین  حنیف خان، اولمپئین ناصر علی اور اولمپئین وسیم فیروز و دیگر نے مطیع اللہ خان کے انتقال پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے دعائے مغفرت کی ہے۔

مزید :

قومی -کھیل -