سود ختم کئے بغیر ملکی معیشت کسی صورت مستحکم نہیں ہو سکتی، حافظ سعید

سود ختم کئے بغیر ملکی معیشت کسی صورت مستحکم نہیں ہو سکتی، حافظ سعید

 لاہور(سٹاف رپورٹر)امیر جماعۃالدعوۃ پاکستان پروفیسر حافظ محمد سعید نے کہاکہ بیرونی قوتوں کو سخت پریشانی ہے کہ پاکستانی قوم لاالہ الااللہ کی طرف واپس پلٹ رہی ہے اوریکطرفہ دوستی و بھارت کو پسندیدہ ترین ملک قرار دینے کے سلسلے کامیاب نہیں ہو سکے۔ مینار پاکستان گراؤنڈہونیوالے اجتماع میں لاکھوں افراد کی شرکت پر بھی بھارت و امریکہ کو شدید پریشانی لاحق ہے۔ جماعۃالدعوۃ اسلام دشمن قوتوں کی آنکھوں میں کانٹے کی طرح کھٹک رہی ہے۔جامع مسجد القادسیہ میں خطبہ جمعہ کے دوران انہوں نے کہاکہ سود اللہ اور اس کے رسول سے کھلی جنگ ہے۔ حکومت جتنے مرضی منصوبے بنائے اور اقدامات کرے سود ختم کئے بغیر ملک کی معیشت کسی صورت مستحکم نہیں ہو سکتی۔ اس موقع پر ہزاروں مردوخواتین نے حافظ محمد سعید کی امامت میں نماز جمعہ ادا کی۔امیر جماعۃالدعوۃ نے اپنے خطاب میں کہاکہ مسلمانوں کو آئی ایم ایف، ورلڈ بنک اور دیگر عالمی اداروں کی غلامی سے چھٹکارا حاصل کرنا ہو گا۔ جن ملکوں کا اسلام سے کوئی تعلق نہیں ہمیں ان کی اقتصادی پالیسیوں کی جانب نہیں دیکھنا بلکہ اللہ تعالیٰ نے جو ضابطے اور قوانین مسلمانوں کیلئے مقرر کئے ہیں اورنبی اکرم نے جس طرح سیاست اور حکومت کرکے دکھائی ہے ہمیں اس سے رہنمائی لینی ہے۔ افسوسناک امریہ ہے کہ آج مسلم ملکوں و معاشروں میں جو حکومتیں کر رہے ہیں انہیں قرآن پاک اور سیرت رسول ؐکی تعلیمات کا علم ہی نہیں ہے۔ مغرب کی ذہنی غلامی میں مبتلا لوگ امت مسلمہ کیلئے کوئی مفید کردار ادا نہیں کر سکتے۔نہوں نے کہاکہ مسلمانوں کی سیاست، معیشت و معاشرت اسلامی اصولوں کی بنیاد پر ہونی چاہیے۔ان کے عقیدے، اعمال اور اخلاق سیرت رسول ؐکے مطابق ہونے چاہئیں۔بیرونی قوتیں آج اس بات پر بہت خوش ہیں کہ مسلمانوں کے دل و دماغ سے یہ سوچیں ختم ہو کر رہ گئی ہیں۔تعلیمی اداروں کا بھی وہ معیار نظر نہیں آرہا جو ہونا چاہیے۔ ان سب معاملات کی اصلاح کی ضرورت ہے۔مسلمان اس زمین پر اللہ کے نمائندے ہیں۔ ان کا ہر عمل اسلامی شریعت کے مطابق ہونا چاہیے۔

مزید : صفحہ آخر


loading...