رکن پارلیمنٹ کو گاندھی کے قاتل کی تعریف کرنے کے اگلے ہی روزمعافی مانگنا پڑگئی

رکن پارلیمنٹ کو گاندھی کے قاتل کی تعریف کرنے کے اگلے ہی روزمعافی مانگنا ...
رکن پارلیمنٹ کو گاندھی کے قاتل کی تعریف کرنے کے اگلے ہی روزمعافی مانگنا پڑگئی

  


نئی دہلی (مانیٹرنگ ڈیسک) بھارت میں حکمران بھارتیہ جنتا پارٹی کے ایک رکن پارلیمنٹ نے پارلیمنٹ میں مہاتما گاندھی کے قاتل کو حب الوطن قرار دینے کے ایک دن بعد اپنے ان کلمات پر پارلیمان میں معافی مانگ لی ہے۔بھارتیہ جنتا پارٹی کے ساکشی مہاراج نے معافی مانگتے ہوئے حزب اختلاف کی جماعت کانگریس کو تنقید کا نشانہ بنایا جس سے حزب اختلاف اور حزب اقتدار میں کشیدگی میں مزید اضافہ ہو گیااور شدید ہنگامہ ہوگیا۔

رکن پارلیمنٹ کو گاندھی کے قاتل کی تعریف کرنے کے اگلے ہی روزمعافی مانگنا پڑگئی

 رکن پارلیمنٹ ساشکی مہاراج نے اپنے بیان میں کہاکہ’گوڈسے خوش نہیں تھا، اس نے غلطی کی لیکن وہ ملک دشمن نہیں تھا،وہ حب الوطن تھا۔‘ساشکی کے بیان سے پارلیمان میں ہنگامہ کھڑا ہو گیا اور حزب اختلاف کے ارکان نے گوڈسے کو ہیرو بنانے کی شدید مذمت کی۔

ساشکی نے ایک دن بعد لوک سبھا میں معافی مانگتے ہوئے کہاکہ وہ گاندھی جی کی عزت کرتے ہیں ،ایوان کا بھی احترام کرتا ہوں، اپنے الفاظ واپس لیتا ہوں۔

یادرہے کہ مہاتما گاندھی کو 1948ءمیں ایک سخت گیر ہندو نتھو رام گوڈسے نے ہلاک کر دیا تھا۔

نوٹ: خبر کے اندر موجود رنگین لائنیں دوسری خبروں کی متعلقہ سرخیاں ہیں ، خبر پڑھنے کیلئے رنگین لائن پر کلک کریں تو اسی صفحے پر یہ خبر بند ہوکر متعلقہ خبر کھل جائے گی۔

مزید : بین الاقوامی


loading...