سینیٹ کی خارجہ کمیٹی نے آرمی چیف سے دورہ امریکہ اور کابل پر بریفنگ مانگ لی

سینیٹ کی خارجہ کمیٹی نے آرمی چیف سے دورہ امریکہ اور کابل پر بریفنگ مانگ لی
سینیٹ کی خارجہ کمیٹی نے آرمی چیف سے دورہ امریکہ اور کابل پر بریفنگ مانگ لی

  


اسلام آباد (ویب ڈیسک) سینٹ کی خارجہ امور کمیٹی نے پاک فوج کے سربراہ جنرل راحیل شریف سے ان کے دورہ امریکہ اور کابل پر بریفنگ مانگ لی ہے، آرمی چیف کو انتیس دسمبر کو خارجہ امور کمیٹی کے سامنے پیش ہونے کیلئے خط بھی لکھ دیا گیا ہے۔ سینٹ کمیٹی کے ذرائع کے مطابق چیئرمین خارجہ امور کمیٹی سینیٹر حاجی عدیل نے اس حوالے سے ایک خط وزارت خارجہ کو بھی بھجوایا ہے کہ بتایا جائے کہ آرمی چیف کا بل گئے اور اس کے بعد امریکہ کا دورہ کیا اور ان دوروں کی پاکستان کے حوالے سے کیا اہمیت ہے اس بارے میں خارجہ امور کمیٹی کو تفصیلی بریفنگ دی جائے۔ وزارت خارجہ نے ابھی اس کمیٹی کو کوئی جواب نہیں دیا تاہم حاجی عدیل نے اپنے دستخطوں کے ساتھ ایسا ہی ایک خط آرمی چیف جنرل راحیل شریف کو جی ایچ کیو بھجوایا ہے اور ان سے کہا گیا ہے کہ وہ کمیٹی کو ان دوروں کے نتائج سے متعلق تفصیلی بریفنگ دیں۔ کمیٹی ذرائع نے بتایا کہ اگر آرمی چیف سیکیورٹی وجوہات کی وجہ سے اجلاس میں نہیں آتے تو سینیٹ کمیٹی خود بھی جی ایچ کیو جانے کیلئے تیار ہے، ایوان بالا کی کمیٹی کے اراکین اس لئے بھی ان دوروں پر بریفنگ چاہتے ہیں کہ اس کے بعد خطے کی صورت حال میں تبدیلی آئی ہے، آرمی چیف کا بل گئے تو ان کی واپسی کے چند دن بعد افغان صدر اشرف غنی پاکستان آئے اور خصوصی طور پر جی ایچ کیو آئے اور ایک خصوصی بریفنگ میں شرکت کی پھر آرمی چیف نے امریکہ کا دورہ کیا وہاں وزیر خارجہ جان کیری سمیت سینیٹ کی خارجہ امور کمیٹی سے ملاقات کی اور اعلیٰ دفاعی و فوجی حکام سے ملے سینیٹ کمیٹی چاہتی ہے کہ ان دونوں میں پاکستان کے مفاد میں کیا پیش رفت ہوئی اس بارے میں میں بھی بتایا جائے۔

مزید : اسلام آباد


loading...