ادھیڑ عمر پاکستانی کا 20 سالہ برطانوی لڑکی کے ساتھ گھناﺅنا فعل

ادھیڑ عمر پاکستانی کا 20 سالہ برطانوی لڑکی کے ساتھ گھناﺅنا فعل
ادھیڑ عمر پاکستانی کا 20 سالہ برطانوی لڑکی کے ساتھ گھناﺅنا فعل

  


لندن (نیوز ڈیسک) برطانیہ میں مقیم ایک پاکستانی بوڑھے نے آخرت کی فکر کرنے کی بجائے شیطان کا روپ دھار لیا اور ایک 20 سالہ لڑکی کی عزت سے کھیلنے کے بعد اس کا جسم بھی مسخ کردیا۔ اسی (80)سالہ محمد رفیق اس عمر میں ہے کہ جب لوگ اپنی عاقبت سنوارنے کی فکر میں ہوتے ہیں لیکن اس نے اپنی عاقبت برباد کرنے کے علاوہ اپنے ملک کی عزت پر بھی سیاہ داغ لگادیا۔

پاکستانی معاشرے کا شرمناک پہلو برطانوی میڈیا سامنے لے آیا ،جاننے کے لے کلک کریں

رفیق نے وکی ہارسمن نامی 14 سالہ لڑکی کو پدرانہ شفقت کا ڈرامہ کرکے خود سے مانوس کیا اور پھر اس کے ساتھ شیطانی کھیل کھیلنا شروع کردیا۔ لڑکی اپنا مذہب چھوڑ کر اسلام قبول کرچکی تھی اور اس نے اپنا نام بھی بدل کر علینا رفیق رکھ لیا تھا لیکن جب بوڑھے کا شیطانی روپ اس کے سامنے آیا تو وہ بیزار ہوگئی۔ پانچ سال جاری رہنے والے تعلق میں رفیق کا رویہ دن بدن منافقانہ اور شکی ہوتا گیاتو بالآخر علینا نے اس سے دوری اختیار کرلی، جس کا بدلہ لینے کیلئے اس نے دو غنڈوں کو رقم دی اور انہوں نے لڑکی کے چہرے پر تیزاب پھینک دیا۔ رفیق نے یہ دھوکہ بھی دینے کی کوشش کی کہ وہ خود بھی تیزاب پھینکنے والوں کا نشانہ بنا تھا لیکن پولیس کی تفتیش میں سارے حقائق سامنے آگئے۔ عدالت نے رفیق اور اس کے دونوں ساتھیوں کو مجرم قرار دے دیا ہے اور سزا کا فیصلہ جمعہ کے روز سنایا جائے گا۔

برطانوی ائیرپورٹ پر اہلکار کو مسافروں کےساتھ شرمناک حرکات مہنگی پڑیں،جاننے کے لئے کلک کریں

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...