جہاز بنانے والی کمپنی ائیر بس کے فیصلے نے ایمریٹس ائیرلائن کو پریشانی میں مبتلا کر دیا

جہاز بنانے والی کمپنی ائیر بس کے فیصلے نے ایمریٹس ائیرلائن کو پریشانی میں ...
جہاز بنانے والی کمپنی ائیر بس کے فیصلے نے ایمریٹس ائیرلائن کو پریشانی میں مبتلا کر دیا

  


پیرس (نیوز ڈیسک) ہوائی جہاز بنانے والی دنیا کی مشہور ترین کمپنی ائیربس نے اپنے سب سے بڑے جہاز A380 کی پیداوار بند کرنے کا عندیہ دے کر یو اے ای کی ایمریٹس ائیرلائن کو پریشان کردیا ہے۔ کمپنی کے فنانس ڈائریکٹر نے ایک حالیہ بیان میں غیر معمولی صاف گوئی کا مظاہرہ کرتے ہوئے یہ کہہ دیا کہ کمپنی کو اتنے بڑے جہاز کے گاہک نہیں مل رہے جس کی وجہ سے اسے بنانے کا عمل بند کیا جاسکتا ہے۔

لندن کی فضائی حدود میں’ ایئر ٹریفک‘ معطل رہنے کے بعد بحال

 یہ جہاز دنیا کا سب سے بڑا مسافر بردار طیارہ ہے جو تقریباً 239 فٹ لمبا ہے اور اس کی اونچائی 79 فٹ ہے۔ اسے بیک وقت تقریباً 500 مسافر لے جانے کیلئے بنایا گیا ہے اور یہ تقریباً 10,000 میل تک مسلسل پرواز کرسکتا ہے۔ چونکہ یہ جہاز بہت لمبی پرواز اور مسافروں کی بڑی تعداد کو لے جانے کیلئے بنایا گیا ہے اس لئے اس کی پرواز کے اخراجات بہت زیادہ ہیں جبکہ اکثر ائیرلائنیں ایک پرواز کیلئے اتنے زیادہ مسافر اکٹھے نہیں کرپاتیں کہ ساری سیٹوں کیلئے ٹکٹ بیچے جاسکیں۔ اس کی قیمت 40 کروڑ ڈالر (تقریباً 40 ارب پاکستانی روپے) ہے اور عام ائیرلائنوں کیلئے تو اسے خریدنا ہی ممکن نہیں۔ اس دیوقامت جہاز کے سب سے بڑے خریداروں میں ایمریٹس ائیرلائن سر فہرست ہے جس کے سربراہ ٹم کلارک کا کہنا ہے کہ وہ ائیربس کے ارادے کے متعلق جان کر خوش نہیں ہوئے کیونکہ ان کی ائیرلائن بڑی حد تک A380 پر انحصار کررہی ہے اور مستقبل میں مزید جہاز خریدنا چاہتی ہے۔ اس جہاز کی پیداوار بند ہونے سے چھوٹی ائیرلائنوں کو تو کوئی فرق نہیں پڑے گا لیکن ایمریٹس ائیرلائن کی لمبی پروازوں کیلئے مسائل پیدا ہوجائیں گے۔

مزید : بین الاقوامی


loading...