داعش مسلمانوں کی نمائندہ نہیں ہے:مفتی اعظم سعودی عرب

داعش مسلمانوں کی نمائندہ نہیں ہے:مفتی اعظم سعودی عرب
داعش مسلمانوں کی نمائندہ نہیں ہے:مفتی اعظم سعودی عرب

  

لاہور(آئی این پی ) مفتی اعظم سعودی عرب الشیخ عبد العزیز بن عبد اللہ بن عبد اللطیف نے کہا کہ داعش مسلمانوں کی نمائندہ نہیں ہے۔انتہاء پسندی ، دہشت گردی اور فرقہ وارانہ تشددکے خاتمے کیلئے مسلمانوں کو اپنی جدوجہد جاری رکھنی ہو گی۔ اسلام امن اور سلامتی کا دین ہے اور مسلمانوں کو مصائب سے پریشان ہونے کی ضرورت نہیں۔ وہ پاکستان علماء کونسل کے پانچ رکنی وفد سے ملاقات کے دوران گفتگو کررہے تھے۔وفد کی قیادت مرکزی چیئرمین حافظ محمد طاہر محمود اشرفی کر رہے تھے ان کے ساتھ مرکزی سیکرٹری جنرل صاحبزادہ زاہد محمود قاسمی ، ڈاکٹر راسخ کشمیری اور حافظ محمد امجد بھی موجود تھے ۔مفتی اعظم سعودی عرب نے کہا کہ پاکستان کے مسلمانوں کو واحدت اور اخوت کے ساتھ حالات کا مقابلہ کرنا چاہیے اور پاکستان میں دہشت گردی اور انتہاء پسندی کے خلاف پاکستانی عوام ، علماء اور حکومت نے دہشت گردی اور انتہاء پسندی کے خلاف جو جدوجہد کی ہے اور کر رہی ہے وہ قابل تحسین ہے ۔انہوں نے کہا کہ عالمی حالات سے مسلمانوں کو پریشان ہونے کی بجائے اللہ کی طرف رجوع کرنا چاہئے اور قرآن و سنت کو اپنی زندگیوں میں لاناچاہئے۔ سیرت مصطفی ؐہی ہمیں ان تمام مصائب سے نکال سکتی ہے ۔انہوں نے کہاکہ مسلمانوں کو اتحاد اور اتفاق کے ساتھ تمام فتنوں کا مقابلہ کرنا ہے اور شامیوں کی جدوجہد انشاء اللہ کامیاب ہو گی ۔

مزید :

بین الاقوامی -