بنگلہ دیشی حکومت کو طنزیہ مضمون میں مذاق کا نشانہ بنانے پر معروف مصنف گرفتار

بنگلہ دیشی حکومت کو طنزیہ مضمون میں مذاق کا نشانہ بنانے پر معروف مصنف گرفتار

  

ڈھاکا(آئی این پی ) بنگلہ دیشی حکومت کو ایک طنزیہ مضمون میں مذاق کا نشانہ بنانے پر ایک معروف مصنف کو گرفتار کرلیا گیا۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق یہ واقعہ بنگلہ دیش میں ایک ایسے وقت میں پیش آیا، جب حکومت نے سیکیورٹی وجوہات کی بناء پر فیس بک پر لگائی جانے والی پابندی کو 3 ہفتوں کے بعد اٹھایا۔ ایلیٹ فورسز کے ترجمان میجر رومان محمد نے بتایا کہ ریپڈ ایکشن بٹالین (آر اے بی) کے افسران نے رفعت احمد کو ملک کے متنازع انٹرنیٹ قانون کے تحت فیس بک پر ایک پوسٹ لگانے پر گرفتار کیا۔ترجمان کا کہنا تھا کہ ’مصنف کو فیس بک پر حکومت کے خلاف اشتعال انگیز تحریر لگانے پر گرفتار کیا گیا۔واضح رہے کہ مذکورہ فیس بک پیج، جس پر 7 لاکھ سے زائد پرستار موجود ہیں، نے گذشتہ ماہ بنگلہ دیشی حکومت کو سیکیورٹی کو وجہ بنا کر فیس بک، موبائل میسنجر، واٹس ایپ اور وائبر پر پابندی لگانے پر بھی تنقید کا نشانہ بنایا تھا۔حکومت کی جانب سے فیس بک پر پابندی جمعرات کے روز اٹھائی گئی تھی تاہم واٹس ایپ اور وائبر پر پابندی تاحال برقرار ہے۔حکومت کو اس بات کا خدشہ تھا کہ مذکورہ ایپس کے ذریعے حکومت کے خلاف احتجاج میں بڑی تعداد میں لوگوں کو جمع کیا جاسکتا ہے، جو ملک میں بدامنی کا باعث ہوسکتا ہے۔یاد ہے کہ بنگلہ دیشی حکومت کی جانب سے فیس بک پر پابندی اْس وقت لگائی گئی تھی جب 2 اپوزیشن رہنماؤں کی جانب سے عدالت میں پھانسی کی سزا کے خلاف کی جانے والی اپیل مسترد کردی گئی تھی۔ ان دونوں کو 1971 میں ہونے والی جنگ میں جنگی جرائم کا مرتکب ٹھہرایا گیا تھا۔

مزید :

عالمی منظر -