13 سال کے دوران 5 ہزار یہودیوں نے خود کشی کی،ریسرچ رپورٹ

13 سال کے دوران 5 ہزار یہودیوں نے خود کشی کی،ریسرچ رپورٹ

  

مقبوضہ بیت المقدس (این این آئی) اسرائیل میں جاری کردہ ایک رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ 2000 ء سے 2013 ء کے درمیانے عرصے میں 5 ہزار یہودیوں نے خود کشی کی، خود کشی کرنیوالے یہودیوں میں بڑی تعداد ان فراد پر مشتمل ہے جو حالیہ برسوں کے دوران بیرون ملک سے اسرائیل منتقل ہوئے۔ ان میں 1658 افراد کی عمریں 15سال کے درمیان ہیں۔اطلاعات کے مطابق اسرائیلی پارلیمنٹ کی ریسرچ کمیٹی کی جانب سے جاری رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ خود کشی کرنیوالے دو تہائی یہودی حالیہ برسوں کے دوران فلسطینی علاقوں میں آباد کئے گئے تھے۔ 2005 ء سے 2013 ء کے عرصے میں کل خود کشی کرنیوالوں کی 78 فیصد نے خود کشی کی۔ خود کشی کرنیوالوں میں بیشتر 1990 ء کے بعد سوویت یونین کی ریاستوں سے اسرائیل میں آباد ہوئے تھے۔رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ خود کشی کرنیوالے یہودیوں میں 16.6 فیصد کا تعلق ایتھوپیا سے ہے جو 1980 ء کے عرصے میں اسرائیل میں آباد ہوئے تھے۔2013 ء میں 117 یہودیوں نے خود کشی کی، ان میں 100 یہودیوں کا تعلق سابق سوویت یونین سے جبکہ 15 کا تعلق ایتھوپیا سے ہے۔

مزید :

عالمی منظر -