امریکہ اور اسرائیل کا ’ایرو 3 ‘ میزائل کا تجربہ

امریکہ اور اسرائیل کا ’ایرو 3 ‘ میزائل کا تجربہ

  

مقبوضہ بیت المقدس (این این آئی) امریکہ اور اسرائیل نے مل کر ’ایرو 3 ‘ نامی میزائل شکن میزائل کا تجربہ کیا ہے تاہم اس کے نتائج کے بارے میں تفصیلات سامنے نہیں آ سکی ہیں ۔اطلاعات کے مطابق اسرائیلی وزارت دفاع اور امریکی ڈیفنس ایجنسی’ایم ڈی اے‘ نے مشترکہ طورپر ’ایرو 3 ‘ کا مشترکہ تجربہ کیا ہے۔ ویب پورٹل’وللا‘ کی رپورٹ کے مطابق دونوں ملکوں کے ماہرین نے مشترکہ طورپر میزائل کا تجربہ کیا ہے۔ ماہرین اس کے نتائج مرتب کررہے ہیں جنہیں جلد منظرعام پرلایا جائیگا۔’حیٹس 3 ‘میزائل طویل فاصلے تک مار کرنیوالا میزائل ہے جبکہ درمیانی درجے تک مار کرنیوالے میزائل کیلئے ’حیٹس 2‘ کی اصطلاح استعمال کی جاتی ہے۔ان میں کم فاصلے تک مار کرنیوالے میزائل کی رینچ 40 کلو میٹر جبکہ زیادہ سے زیادہ 250 کلو میٹر فاصلے تک مار کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے۔ یہ میزائل حماس، حزب اللہ اور شام کے پاس بھی موجود ہیں۔ حیٹس 3کی مدد سے ’فروغ‘،’فاتح 110 ‘، ’زلزال 2 ‘ اور ’زلزال 3 ‘ کو فضاء میں بتاہ کیا جاسکتا ہے۔

امریکہ اور اسرائیل کے درمیان میزائل ٹیکنالوجی کے تبادلے کیساتھ دونوں ملکوں کے ماہرین مشترکہ تجربات بھی کرتے ہیں۔ رواں سال میں امریکہ اور اسرائیل کایہ تیسرا مشترکہ میزائل تجربہ ہے۔

مزید :

عالمی منظر -