گالف کی ترقی اور فروغ کیلئے ہمیشہ کردار ادا کرتا رہونگا،میاں عبدالوحید

گالف کی ترقی اور فروغ کیلئے ہمیشہ کردار ادا کرتا رہونگا،میاں عبدالوحید

  

بطور سفیر بھی بیرون ممالک پاکستان کے لئے کھیلوں کے مواقع پیدا کئے

حکومت کے اقدامات خوش آئند ہیں، کھیلوں پر بھرپور توجہ دی جارہی ہے،گالفر کی پاکستان سے گفتگو

پاکستان میں گالف کا کھیل اس وقت زیادہ ترقی حاصل نہیں کررہا لیکن اس سے منسلک کھلاڑیوں کی بات کی جائے تو بلاشبہ ان میں ٹیلنٹ کی بھرمار ہے اور اگر ان پر بھرپور توجہ دی جائے اور ملک میں اس کھیل کے زیادہ سے زیادہ ایونٹس منعقد کئے جائیں تو یہ ٹیلنٹ منظر عام پر آسکتا ہے اور اس طرح پوری دنیا میں جس طرح اس کھیل کو ترقی اور عروج حاصل ہے اسی طرح پاکستان میں بھی ہوسکتا ہے پاکستان دنیا کا واحد ایسا ملک ہے جہاں پر صرف توجہ کی کمی ہے اور ٹیلنٹ کی کمی نہیں ہے بلکہ ٹیلنٹ تو کھلاڑیوں میں کوٹ کوٹ کر بھرا ہوا ہے ایسا ہی ایک نام گالفر سے جڑا میاں عبدالوحید کا بھی ہے جو اس کھیل میں پوری دنیا میں پاکستان کا نام روشن کرنے کی جدوجہد میں ہیں اور ان کا مقصد اس کھیل کو ملک میں فروغ دینے کے ساتھ ساتھ نئے ٹیلنٹ کو بھی متعارف کروانا ہے ۔روز نامہ پاکستان سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے گالفر میاں عبدالوحید نے کہا کہ گالف کاکھیل میرا جنون ہے اور اس کھیل کومیں پوری دنیا کی طرح اپنے ملک پاکستان میں بھی مقبولیت کی چوٹی پر لے کر جانا چاہتا ہوں اور میری خواہش ہے کہ جس طرح ملک میں کرکٹ اور ہاکی کے کھیل کو فروغ مل رہا ہے اور اس کھیل سے منسلک کھلاڑیوں کو توجہ دی جارہی ہے اسی طرح گالف کے کھیل اور گالفرز کو بھی توجہ ملے اور اس کھیل کو بھی ملک میں خوب پذیرا ئی ہوں انہوں نے کہا کہ میں نے ایم اے اکنامکس پنجاب یونیورسٹی سے کیا ہوا ہے جبکہ ایم اے انٹرنیشنل لاء فیچر سکول آف لاء اینڈ ڈپلومیسی ہاورڈ یونیورسٹی یو ایس اے سے کیا ہوا ہے جبکہ مجھے اٹلی میں 1981-84 تک سفیر رہنے کا بھی اعزز حاصل ہے جبکہ جرمنی میں بھی 1984-87 تک سفیر کے فرائض سر انجام دے چکا ہوں جبکہ میں 1990 ء1993 اور 1997 ء میں پاکستان قومی اسمبلی کا رکن بھی منتخب ہوچکا ہوں اور بطور ممبر قومی اسمبلی بھی میں نے کھیلوں پر بھرپور توجہ دینے کی کوشش کی ہے اور نہ صرف اس کھیل بلکہ دیگر کھیلوں کی ترقی بھی میری خواہش ہے جبکہ مجھے 1997 میں چیئرمین سٹینڈنگ کمیٹی برائے خارجہ امور پاکستان قومی اسمبلی کا چیرمین ہونے کا بھی اعزاز حاصل ہوچکا ہے لیکن ان سب مصروفیات کے باوجود میری توجہ گالف کے کھیل پر رہی اور میں نے ہر طرح سے کوشش کی کہ اس کھیل کو ترقی دینے کے لئے اپنا بھرپور کردارادا کرسکوں انہوں نے مزید کہا کہ مجھے 27 سال گالف کھیلتے ہوئے ہوچکے ہیں بطور گالفر میں نے ہمیشہ عمدہ کھیل پیش کرنے کی کوشش کی اور آج بھی اس عمر میں بھی اس کھیل سے منسلک ہوں او ر کسی بھی ایونٹ میں میری کوشش ہوتی ہے کہ میں کامیابی حاصل کروں انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان مسلم لیگ ن بہت اچھی سیاسی جماعت ہے او ربہت اچھے کام کررہی ہے اس دو ر میں جتنے ترقیاتی کام ہورہے ہیں و ہ قابل تعریف ہیں اور پاکستان کو ترقی پر لے جانے کیلئے ایسے ہی اقدامات کی ضرورت ہے یہ حکومت نہ صرف عوامی مسائل حل کرنے میں کوشاں ہے بلکہ اس کے ساتھ ساتھ وہ جس طرح کھیلوں کے بھی کام کرہی ہے وہ بھی قابل تعریف ہے اور امید ہے کہ اسی طرح سے کام کرتی رہے گی ایسے حکمرانوں کی ہمیں ضرورت ہے پنجاب کے وزیر اعلی میاں شہاز شریف کی کارکردگی نے بہت متاثر کیا ہے او روہ جس عمدگی سے صوبہ پنجاب کو آگے لیکر چل رہے ہیں اور ان کی زیر قیادت جس طرح سے کام ہورہے ہیں وہ خوش آئند ہیں بہت کم ایسی حکومتیں ہوتی ہیں جوترقیاتی کامو ں اور دیگر مسائل کے حل کے ساتھ ساتھ کھیلو ں پر بھی توجہ دیتی ہیں پورے پاکستان میں کھیلوں کی ترقی کیلئے پنجاب جیسا کام ہونا چاہئیے انہوں نے کہا کہ جب میں بطور سفیر اٹلی اور جرمنی میں فرائض سر انجام دے رہا تھا تو میں نے وہاں پر بھی پاکستان کے لئے بہت ایونٹس کا انعقاد کروایا تھا اور اپنا کردار ادا کیا تھا انہوں نے کہا کہ جوں جوں انسان بوڑھا ہوتا ہے یہ کھیل زیادہ کھیلاجاتا ہے اور اس کھیل میں زیادہ مہارت حاصل ہوتی ہے ۔ گالفر کو منظر عام پر لانے کے لئے بھرپور اقدامات اور زیادہ سے زیادہ ایونٹس کا انعقاد بہت ضروری ہوتا ہے تاکہ وہ ان پلیٹ فارم پر اپنی صلاحیتو ں کو بروئے کار لاسکے۔

مزید :

ایڈیشن 2 -