پارلیمنٹ کی رائے بلڈوز کر کے سائبر کرائم بل کی منظوری افسوسناک ہے حسن محی الدین

پارلیمنٹ کی رائے بلڈوز کر کے سائبر کرائم بل کی منظوری افسوسناک ہے حسن محی ...

  

لاہور(نمائندہ خصوصی)تحریک منہاج القرآن کی سپریم کونسل کے چیئرمین ڈاکٹر حسن محی الدین نے کہا ہے کہ عوامی صحافتی حلقوں اور پارلیمانی اپوزیشن کی رائے کو بلڈوز کر کے سائبر کرائم بل منظور کرنا افسوسناک اور ناپسندیدہ قانون سازی ہے اس سے فائدہ کی بجائے نقصان ہو گا۔حکومت عددی اکثریت کے بل بوتے پر قومی سلامتی کی حامل اس قانون سازی کو مفاداتی اور جماعتی سیاست سے آلودہ نہ کرے،قومی اسمبلی کی طرف سے منظور کیے جانے والے سائبر کرائم بل میں اپوزیشن کی تجاویز شامل کیے جانے تک سینیٹ آف پاکستان بل کی منظوری نہ دے اور بل کے حتمی ڈرافٹ کو رائے عامہ کیلئے پبلک کیا جائے ان خیالات کا اظہار انہوں نے تحریک منہاج القرآن کے نائب ناظمین کے ماہانہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اجلاس میں ایک قرارداد کے ذریعے قومی ایکشن پلان کے جملہ نکات پر عملدرآمد کرنے کا مطالبہ کیا گیا۔

اور آپریشن ضرب عضب کی تکمیل اور کامیابی کیلئے دعا کی گئی۔اجلاس میں 16 دسمبر کو سانحہ اے پی ایس اور سانحہ ماڈل ٹاؤن کے شہداء کی یاد میں تعزیتی ریفرنس منعقد کرنے کا فیصلہ بھی کیا گیا۔اجلاس میں 24دسمبر کو مینار پاکستان پر منعقد ہونیوالی عالمی میلاد کانفرنس کے سکیورٹی انتظامات کا جائزہ لیا گیا ۔اجلاس میں اعلان کیا گیا کہ ڈاکٹر طاہر القادری 32 ویں عالمی میلاد کانفرنس سے خطاب کریں گے ۔ڈاکٹر حسن محی الدین نے کہا کہ آپریشن ضرب عضب کے بعد دہشتگردوں کیلئے اپنی منفی سرگرمیاں کھلے بندوں جاری رکھنا ناممکن ہو گیا تھااس لیے وہ انٹرنیٹ کے ذریعے معصوم ذہنوں کو دہشتگردی کی طرف مائل کررہے تھے،ان منفی اقدامات کوکڑی سزاؤں کے ساتھ روکنا ناگزیر ہے ۔

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -