انتہا ئی مطلو ب دہشتگر دوں میں سے کوئی دو سا ل میں گر فتا ر نہیں کیا جا سکا

انتہا ئی مطلو ب دہشتگر دوں میں سے کوئی دو سا ل میں گر فتا ر نہیں کیا جا سکا

  

لا ہور(رپورٹ۔ محمد یو نس با ٹھ ) حسا س ادا رو ں کی نشاندہی پرپنجاب حکو مت کی جا نب سے جا ر ی کر دہ دہشت گردوں سمیت انتہا ئی مطلو ب افراد کی فہر ست سرد خا نے کی نذر ہو تی جا رہی ہے اور کا ؤنٹر ٹیرر از م ڈیپا رٹمنٹ پنجا ب کی طر ف سے شائع کی جا نے و الی انتہا ئی مطلو ب ریڈ بک میں درج کسی ایک ملز م کوبھی گز شتہ دو سا ل کے دوران گر فتا ر نہیں کیا جا سکا ۔ان میں سے بیشتر افراد ایسے بھی ہیں جن کے سر کی قیمت 10لا کھ سے ایک کروڑ روپے تک مقرر کی گئی ہے ۔ کا ؤنٹر ٹیرر از م ڈیپا رٹمنٹ پنجا ب کے سر براہ ایڈ یشنل آئی جی رائے طا ہر نے اس با ر ے میں مو قف اختیا ر کیا ہے کہ ان دہشت گردوں کی گر فتا ری کے لیے فور س تشکیل دی گئی ہے ۔بہت سے دہشت گردو ں کو گر فتا ر بھی کر لیا گیا ہے جو گر فتا ر نہیں ہو سکے وہ افغا نستا ن سمیت دیگر مما لک میں فرار ہو چکے ہیں اور ان کی گر فتا ر ی کے لیے دن را ت کو شش جا ر ی ہے ۔اس نئی لسٹ کے مطابق ایک دہشتگرد کے سر کی قیمت ایک کروڑ روپے‘5کے سر کی قیمت50لاکھ روپے فی کس‘ ایک کے سر کی قیمت30لا کھ روپے‘ ایک کے سر کی قیمت25لاکھ روپے‘10دہشتگر دوں کے سر کی قیمت20لاکھ روپے فی کس‘8دہشتگردوں کے سر کی قیمت10لاکھ روپے فی کس‘31دہشتگردوں کے سر کی قیمت5لاکھ روپے فی کس مقرر کی گئی ہے۔محکمہ داخلہ پنجاب کی طرف سے فراہم کردہ معلومات کے مطابق سب سے بڑی سر کی قیمت ایک کروڑ روپے مطیع الرحمن عرف صمد استاد کی ہے۔محکمہ داخلہ کے مطابق مطیع الرحمن سابق وزیر اعظم شوکت عزیز پر اٹک میں خود کش حملہ سمیت دہشتگردی کے5مقدمات میں مطلوب ہے۔50لاکھ روپے سر کی قیمت والے5دہشت گردوں میں منصور‘ قاری احسان الحق‘ رانا محمد افضل‘ قاری عبیداللہ اور کمانڈر طارق امیر شال ہیں۔سمیع اللہ کے سر کی قیمت30لاکھ روپے‘ محمد زبیر کے سر کی قیمت25لاکھ روپے مقرر کی گئی ہے۔20لاکھ رو پے سر کی قیمت والے10دہشتگردوں میں محمد ہارون‘ محمد طیب‘ فیاض احمد‘ اکرام اللہ‘ قاری محمد یسین‘ضیاء اللہ‘اطہر عباس‘ نفیس الرحمن‘ تنویر احمد‘ روضہ دین شامل ہیں۔10لاکھ روپے سر کی قیمت والے8دہشتگردوں میں نورالامین‘ عبدالحمید وٹو‘ بلال‘ نادر‘ رانا نعیم‘ عبدالطیف‘ محمد رفیق‘ علی رضوان‘ سعید الرحمن شامل ہیں۔5لاکھ روپے سر کی قیمت والے31دہشتگردوں میں محمد ماجد‘ عنایت اللہ‘ سمیت دیگر ملز ما ن شا مل ہیں ۔ان میں سے کسی ایک کو بھی گر فتا ر نہیں کیا جا سکا ۔

مزید :

صفحہ آخر -