نواز مودی رسمی ملاقات سے بڑی تبدیلی نہیں ہو گی،عسکری ماہرین

نواز مودی رسمی ملاقات سے بڑی تبدیلی نہیں ہو گی،عسکری ماہرین

  

لاہور(خبر نگار خصوصی) نواز مودی ملاقات رسمی ہے بڑی تبدیلی نہیں ہو گی ۔سیاستدانوں کا مل بیٹھنا خوش آئند ہے ۔دونوں ممالک کو مسئلہ کشمیر کو کشمیر یوں کی رائے کے مطابق حل کرنے سے ہی کشیدگی ختم ہو سکتی ہے ان خیالات کا اظہار ملک کے عسکری ماہرین نے روز نامہ پاکستان سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔جنرل (ر)راحت لطیف نے کہا کہ عمران خان کی نریندر مودی سے ملاقات معنی خیز ہے جس کے اندر کوئی گہری بات ہو سکتی ہے ،عمران خان نے اگر صرف کرکٹ کی بات کی ہے تو ہو سکتا ہے پی سی بی کے کہنے پر گیا ہوگا۔ ایجنڈا واضح نہیں ہے لیکن ایک بات سچ ہے کہ عمران خان کسی کے کہنے پر کام نہیں کرتا ۔وائس ایڈمرل (ر) جاوید اقبال نے کہا کہ عمران خان کی ملاقات سے خوشگوار تبدیلی آئے گی ،عمران خان پر لیبل ہے کہ وہ اسٹبلشمنٹ یا فوج کا آدمی ہے اس داغ کو دھونے کی کوشش کر رہا ہے ،نریندر مودی سے ملاقات سے عمران خان کا قد نمایا ں ہوا ہے ،جب تک دونوں ممالک کشمیر میں تھانیداری کرتے رہیں گے خطے میں کشیدگی کم نہیں ہو سکتی ،کشمیریوں کے حق رائے دہی کا احترام کرتے ہوئے ان کو آزادی دینی چاہیے۔ائیر مارشل(ر)شاہد ذوالفقار نے کہا کہ عمران مودی ملاقات ایک رسمی ہے عمران خان دوستوں سے ملنے گیا تھا تو انہوں نے نریندر مودی سے ملاقات کی ۔سیاسی لوگوں کا مل بیٹھا اچھی بات ہے۔

مزید :

صفحہ آخر -