مہمند ایجنسی میں سرکاری سکولوں کے اساتذہ کا احتجاجی مظاہرہ

مہمند ایجنسی میں سرکاری سکولوں کے اساتذہ کا احتجاجی مظاہرہ

  

مہمند ایجنسی ( نمائندہ پاکستان )مہمند ایجنسی، سرکاری سکولز چھٹے روز بھی بند رہے۔ اساتذہ کا بدستور غلنئی میں احتجاجی مظاہرہ جاری ہے۔ سیاسی جماعتوں اور فاٹا پارلیمنٹیرینز کے تہہ دل سے مشکور ہیں۔ مطالبے کے حل تک احتجاج جاری رہیگا۔ ان خیالات کا اظہار پرنسپل دست علی خان، ثناء اللہ خان، حاضر جان جمالی، عطاء اللہ ترگزئی و دیگر نے مہمند پریس کلب کے سامنے چھٹے روز بھی جاری ہونے والے احتجاجی مظاہرے کے شرکاء سے خطاب کے دوران کیا۔ انہوں نے کہا کہ ہم اپوزیشن لیڈر خورشید شاہ فاٹا پارلیمنٹیرین جی جی جمال، اعجاز اورکزئی ، شاہ جی گل آفریدی و دیگر سیاسی جماعتوں کے بے حد مشکور ہیں کہ جنہوں نے ہمارے ساتھ اسلام آباد دھرنے میں شرکت کر کے ہماری حوصلہ آفزائی کی۔ ہماری احتجاج اُس وقت تک جاری رہیگی جب تک فاٹا سیکرٹریٹ اور محکمہ سفران نے ہمارے مطالبے منظور نہ کی ہو۔ انہوں نے ایجنسی ایجوکیشن آفیسر مہمند سے بھی مطالبہ کیا کہ اساتذہ کرام کو ٹرمنیشن کی دھمکی نہ دیا کریں ، ہم اپنے حق حاصل کرنے کیلئے ہر قسم کی قربانی کو تیار ہیں۔ حکومت فی الفور ہمارے مطالبات پر غور کر کے ہمیں اپنا حق دلائے۔ آخر میں مظاہرین نے پریس کلب سے غلنئی چوک تک احتجاجی مارچ کر کے پشاور ٹو باجوڑ شاہراہ پر دھرنا دیا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -