84 ارب کا بجٹ ضائع، پولیس اداروں کے بعد میڈیا دفاتر، پریس کلبوں کی حفاظت سے بھی دستبرادار

84 ارب کا بجٹ ضائع، پولیس اداروں کے بعد میڈیا دفاتر، پریس کلبوں کی حفاظت سے ...

  

ملتان (کرائم رپورٹر)صوبہ بھر میں عوام کی جان و مال کی حفاظت پر مامور محکمہ پولیس نے 84ارب روپے کے بجٹ کے باوجودبھی عام شہریوں ،نجی اداروں،سکولوں، کالجز، شاپنگ مال اوربنکوں کو تحفظ فراہم کرنے میں ناکامی کے بعد اب میڈیا دفاتر اور پریس کلب کو تحفظ فراہم کرنے سے بھی دستبرداری (بقیہ نمبر4صفحہ12پر )

کا اعلان کردیا ہے۔اس ضمن میں گزشتہ روز ملتان سمیت پنجاب کے دیگر اضلاع جہاں میڈیا کے دفاتر اور پریس کلب موجود ہیں کو ایک ہدایت نامہ جاری کیا گیا ہے ۔جس میں الیکٹرونک اور پرنٹ میڈیا کے مالکان کو اپنی مدد آپ کے تحت دفاتر میں سیکورٹی کے انتظامات فول پروف کرنے کی ہدایت کی گئی ہے،ضلعی پولیس ملتان کی جانب سے جاری کیے گئے ہدایت نامے کے مطابق ضلع میں موجود میڈیا گروپس اپنے دفاتر کے اطرا ف کی دیواریں 8فٹ بلند کروائیں،دفاتر میں مورچہ بند سیکورٹی گارڈ کی موجودگی یقینی بنائی جائے،جبکہ دفاتر کے داخلی راستوں پر کنکریٹ بیرئیر لگائے جائیں۔واک تھرو گیٹ نصب کیے جائیں۔ دفاتر کے باہر ماہر سیکو رٹی گارڈ ز تعینات کیے جا ئیں۔یاد رہے کہ سانحہ پشاور کے بعد پولیس نے سکولوں اور کالجز کو اپنی مدد آپ کے تحت سیکورٹی کے مناسب اقدامات کرنے کی ہدایت جاری کی تھی۔جس پر پنجاب سمیت ملک بھر کے تمام سکولوں وکالجز میں سیکورٹی کے اپنی مدد آپ کے تحت حفاظتی انتظامات کیے تھے۔سال2014کے دوران پنجاب پولیس کا بجٹ70روپے تھا،جبکہ رواں سال یہ84ارب روپے سے تجاوز کر گیا ہے۔رواں سال ملتان ریجن میں جرائم کی شرح میں اضافہ ہوا ہے۔ محکمہ پولیس کو اربوں روپے کا بجٹ دیا گیا ہے ۔لیکن عوام کو اس سے کوئی فیض حاصل نہیں ہوا۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -