ماسک نہ دستانے، یونیفارم نہ صحت کی سہولیات، سینٹی ورکرز مسائل میں گھرِ گئے

ماسک نہ دستانے، یونیفارم نہ صحت کی سہولیات، سینٹی ورکرز مسائل میں گھرِ گئے

  

ملتان (سٹی رپورٹر) سالڈ ویسٹ منیجمنٹ کمپنی کے ورکر ز بنیادی سہولیا ت سے محروم ماسک ،دستانے ، یوبیفارم نہ ہونے کی وجہ سے ورکرز سانس کے مرض سمیت

(بقیہ نمبر9صفحہ12پر )

مختلف امراض کا شکا ر ہو گئے سخت سے سخت بیماری میں ڈیوٹی پر نہ آنے پر تنخواہوں سے کٹوٹی کر لی جاتی ہے دوران جاب وفات پا جانے والے ورکروں کے بچوں کو دفاتر کے چکر لگوانے کے باوجود نوکری دینا تو دور کی بات پنشن سمیت دیگر مراعات کے لئے بھی کئی کئی مہینے انتظار کرواتے ہیں جس کی وجہ سے سنیٹری ورکر شدید مشکلات کا شکار ہے ۔ملتان شہر میں صفائی ستھرائی کا کام کرنے والے دو ہزار سے زائد سنیٹری ورکر ز انتظامیہ کی جانب سے حفاظتی اقدامات نہ ہونے سے پریشانی میں مبتلا ہیں بتایا جاتا ہے کہ خواتین سنیٹری ورکر ز صبح سویرے اٹھ کر اپنے اپنے علاقوں میں صفائی کے لئے نکل جاتے ہیں جو دوپہر تک کام کاج اور دفتر میں حاضری کے بعد فارغ ہوتے ہیں سارا دن کام کرتے ہیں۔ورکرز سانس کے مرض کا شکار ہو کر رہ گئے بیماری کی صورت میں ورکرز اپنا علاج خو د کرواتا ہے اسے انتظامیہ کی جانب سے علاج کی سہولت تو دور کی بات علاج کروانے کے لئے چھٹیاں بھی نہیں ملتیں۔ سالڈ ویسٹ منیجمنٹ ملتان میں کا م کرنے والے ورکرز زرینہ بی بی ، حمید ہ بی بی ، پروین بی بی ، رشیدہ بی بی ، پروین جوزف ،اور جمیل مسیح نے کہاہے کہ سالڈ ویسٹ منیجمنٹ سنیٹری ورکرز میں دوہر ا معیار ختم کرے سنیٹری ورکروں کو بھی دیگر ملازمین کی طرح صحت کی سہولیات مہیاں کی جائیں ۔ ہم رہائش پذیر ہیں ان علاقوں میں صفائی کے انتظامات کئے جاتے ہیں نہ وہاں کا سیورج سسٹم بحال کیا جاتا ہے جس کی وجہ سے ہم پسماندگی کا شکا رہیں انہوں نے کہاہے کہ گرمی سردی میں صبح سویر ے اٹھ کرشہر کی صفائی ستھرائی ہم کرتے ہیں لیکن سپر وائزہر مہینے ہماری تنخواہ سے 1500سے2000روپے کٹوٹی کر لیتا ہے۔ سنیٹری ورکرز کے حقوق کے لئے کام کرنے والی سماجی تنطیم ایکشن اگینٹس پاورٹی کے ڈائریکڑ سرفراز کلیمنٹ نے کہاہے کہ دنیا بھر میں سنیٹری ورکرز کی صحت کا خاص خیال رکھا جاتا ہے جس کے لئے انہیں ماسک ، دستانے ، موسم کے مطابق یونیفارم مہیا کیا جاتا ہے لیکن افسوس پاکستان میں سنیٹری ورکرز کے ساتھ نہ صرف سوتیلی ماں جیسا سلوک کیا جاتا بلکہ ان کو آخری درجے کا شہری سمجھا جاتا ہے۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -