ڈونلڈ ٹرمپ اور پرنس ولید بن طلال میں ’جنگ‘ چھڑ گئی، امریکی صدارتی امیدوار نے عرب دنیا کے امیر ترین آدمی کو انتہائی شرمناک بات کہہ دی

ڈونلڈ ٹرمپ اور پرنس ولید بن طلال میں ’جنگ‘ چھڑ گئی، امریکی صدارتی امیدوار ...
ڈونلڈ ٹرمپ اور پرنس ولید بن طلال میں ’جنگ‘ چھڑ گئی، امریکی صدارتی امیدوار نے عرب دنیا کے امیر ترین آدمی کو انتہائی شرمناک بات کہہ دی

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) امریکی صدارتی امیدوار نے ایک ہفتہ قبل مسلمانوں کے امریکہ میں داخلے پر پابندی لگانے کا بیان دیا تھا جس پر سعودی شہزادے ولید بن طلال نے ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا تھا کہ ”ڈونلڈ ٹرمپ امریکہ کے لیے ذلت کا باعث ہے۔“انہوں نے ڈونلڈ ٹرمپ کو مشورہ دیا تھا کہ ”تم کبھی انتخاب نہیں جیت سکو گے اس لیے اس مقابلے سے ابھی دستبردار ہو جاﺅ۔“شہزادہ ولید کے اس جواب پر دونوں میں لفظی جنگ چھڑ گئی ہے اور اب ڈونلڈ ٹرمپ نے شہزادہ ولید بن طلال کو اپنے روایتی گستاخانہ لہجے میں جواب دے دیا ہے اور انہیں نشئی کہہ کر پکارا۔ امریکی صدارتی امیدوار نے اپنے ٹوئٹر اکاﺅنٹ سے ٹویٹ کیا ہے کہ”نشئی شہزادہ ولید بن طلال اپنے باپ کی دولت کے بل پر ہم امریکی سیاستدانوں کو قابو کرنا چاہتا ہے، جب میں امریکہ کا صدر منتخب ہو جاﺅں گا تو وہ ایسا نہیں کر سکے گا۔“ واضح رہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ اپنی پوری الیکشن مہم مسلمانوں کی مخالفت کے ایک نقطے پر چلا رہے ہیں حالانکہ گزشتہ روز این بی سی کے ایک سروے میں 60فیصد امریکی عوام ڈونلڈ کے مسلمانوں کے خلاف اس موقف کی مخالفت کر چکے ہیں۔

مزید :

بین الاقوامی -