سعودی عرب کی تاریخ میں پہلی بار17 خواتین کونسلر منتخب

سعودی عرب کی تاریخ میں پہلی بار17 خواتین کونسلر منتخب
 سعودی عرب کی تاریخ میں پہلی بار17 خواتین کونسلر منتخب

  

ریاض (مانیٹرنگ ڈیسک )سعودی عرب میں ہونے والے تاریخی بلدیاتی انتخابات کے ابتدائی نتائج کے مطابق17 خواتین امیدواروں نے کامیابی حاصل کر لی ہے۔مکہ میونسپل کونسل کے لیے منتخب ہونے والی سلمہ بنت حزاب العتیبی کا مقابلہ سات مردوں اور دو خواتین سے تھا۔وائس آف جرمنی کے مطابق اس قدامت پسند ملک میں پہلی مرتبہ ان انتخابات میں نہ صرف خواتین کو ووٹ ڈالنے کی اجازت دی گئی تھی بلکہ انہیں بہ طور امیدوار سیاسی میدان میں اترنے کی بھی اجازت حاصل تھی۔ اس قدامت پسند ملک میں خواتین کے انتخابات میں حصہ لینے پر عائد پابندی کے خاتمے کے بعد پہلی مرتبہ کم از کم 17 خواتین نے انتخابات میں کامیابی حاصل کرتے ہوئے میونسپل کونسل کی نشستیں حاصل کی ہے۔ہفتے کے روز منعقد ہونے والے بلدیاتی انتخابات میں مجموعی طور پر 6 ہزار 440 امیدواروں کا مقابلہ تھا، جن میں989 خواتین بھی شامل ہیں۔کامیابی حاصل کرنے والی پہلی تین خواتین کے نام سلمہ بنت حزاب العتیبی، لامی عبدلعزیز اور راشہ حفظی ہیں۔ سلمہ نے مکہ میونسپل کونسل سے جب کہ باقی دونوں نے جدہ کے مغربی انتخابی حلقوں سے کامیابی حاصل کی ہے ۔تیل سے مالا مال اس عرب قدامت پسند بادشاہت میں ہونے والے ان انتخابات میں ان انتخابات کے لیے ساڑھے تیرہ لاکھ مردوں کے ساتھ ساتھ ایک لاکھ تیس ہزار خواتین کے ووٹ رجسٹر کیے گئے تھے۔

مزید :

بین الاقوامی -