ورلڈ بینک نے پاکستان اور بھارت کو آبی تنازع سندھ طاس معاہدے کے مطابق حل کرنے کیلئے جنوری تک کی مہلت دیدی

ورلڈ بینک نے پاکستان اور بھارت کو آبی تنازع سندھ طاس معاہدے کے مطابق حل کرنے ...
ورلڈ بینک نے پاکستان اور بھارت کو آبی تنازع سندھ طاس معاہدے کے مطابق حل کرنے کیلئے جنوری تک کی مہلت دیدی

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

واشنگٹن (ڈیلی پاکستان آن لائن ) ورلڈ بینک نے پاکستان اور بھارت کو آبی تنازع حل کرنے کیلئے جنوری تک کی مہلت دیدی ۔

ڈان نیوز کے مطابق ورلڈ بینک نے بھارت کی درخواست پر سندھ طاس معاہدے پر غیر جانبدار ماہر اور پاکستان کی درخواست پر چیئرمین ثالثی عدالت کی تقرری روکتے ہوئے پاکستان اور بھارت کو سندھ طاس معاہدے کی روشنی میں آبی تنازع حل کرنے کی ہدایت کر دی ہے ۔ورلڈ بینک کے مطابق اگر پاکستان اور بھارت نے آبی تنازع سندھ طاس معاہدے سے ہٹ کر حل کیا تو یہ معاہدہ غیر فعال ہوجائے گا۔

لاہور میں دھند کم ہو گئی ، موٹر وے کو ٹریفک کیلئے کھول دیا گیا

یاد رہے ہندوستان کی جانب سے غیر جانبدار ماہر کا تقرر کرنے کی درخواست کی گئی تھی جبکہ پاکستان نے بھی چیئرمین عالمی ثالثی عدالت کے تقرر کی درخواست کی تھی۔ہندوستان کے ساتھ سندھ طاس معاہدہ کے حوالے سے مذاکرات ناکام ہونے کے بعد پاکستان نے رواں برس جولائی میں عالمی ثالثی عدالت سے رجوع کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔پانی و بجلی کے سیکریٹری محمد یونس ڈھاگا کی سربراہی میں 8 رکنی وفد پانی کے تنازع پر مذاکرات کے لیے ہندوستان گیا تھا تاہم کوئی پیش رفت نہ ہوسکی ۔

ینگ ڈاکٹر ز نے لاہور سمیت پنجاب بھر میں سرکاری ہسپتالوں کے او پی ڈیز میں کام بند کر دیا

پاکستان نے اسلام آباد سے ملحقہ علاقوں میں ہندوستان کے اہم ہائیڈرو پاور پروجیکٹس کی تعمیر پر سخت تحفظات کا اظہار کیا تھاتاہم اب ورلڈ بینک گروپ کے صدر جم یانگ کنگ کے مطابق پاکستان اور بھارت آبی تنازع کو سندھ طاس معاہدے کے مطابق حل کریں، دونوں ملکوں کی معاہدے سے ہٹ کر متبادل حل کی کوشش کے نتیجے میں سندھ طاس معاہدہ غیر فعال ہوسکتا ہے۔اس حوالے سے ورلڈ بینک نے پاکستان اور بھارت کے وزرائے خزانہ کو خطوط کے ذریعے آگاہ کردیا۔

طیارہ حادثہ: فرانسیسی تحقیقاتی ٹیم حویلیاں میں جائے وقوعہ پر پہنچ گئی

وزارت خزانہ کے مطابق ورلڈ بینک کا خط پاکستان کو موصول ہوگیا، جس کے بعد وزارت پانی و بجلی کو معاملے کا جائزہ لینے کا کہا گیا اور وزارت پانی و بجلی نے انڈس واٹر کمشنر کو متنازع ڈیمز کا معاملہ بھارت کے ساتھ اٹھانے کی ہدایت کردی۔

واضح رہے کہ ہندوستان دریائے نیلم کے پانی پر 330 میگاواٹ کشن گنگا اور دریائے چناب کے پانی پر 850 میگا واٹ رتلے پن بجلی منصوبہ تعمیر کر رہا ہے۔

مزید : بین الاقوامی