اپیکس کمیٹی کا اجلاس انتہائی خوشگوار ماحول میں ہوا، بلاول کے خون میں دانش ہے، 27 دسمبر کو جو بھی ہو گا، کم از کم یوٹرن نہیں ہو گا: مولا بخش چانڈیو

اپیکس کمیٹی کا اجلاس انتہائی خوشگوار ماحول میں ہوا، بلاول کے خون میں دانش ...

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) مشیر اطلاعات سندھ مولا بخش چانڈیو نے کہا ہے کہ ڈی جی رینجرز جنرل بلال اکبر اور کور کمانڈر کراچی نوید مختار کا آج اپیکس کمیٹی کا آخری اجلاس بہت ہی خوشگوار ماحول میں ہوا۔ کراچی آپریشن دہشت گردی کے مکمل خاتمے تک جاری رکھنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ پیپلز پارٹی جب اپوزیشن کا کردار ادا کرنا چاہتی ہے تو پھر کون اس کا مقابلہ کر سکتا ہے؟ 27 دسمبر کے بعد جو بھی ہو گا، کم از کم یوٹرن نہیں ہو گا۔ دانش اور سیاست کا تعلق عمر سے نہیں ہے، بلاول آنے والے وقت میں پاکستان کے قائد ہیں۔

ایپکس کمیٹی کا اجلاس، وزیراعلیٰ سندھ، کور کمانڈر کراچی اور ڈی جی رینجرز کے درمیان تحائف کا تبادلہ

تفصیلات کے مطابق مولا بخش چانڈیو نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ڈی جی رینجرز جنرل بلال اکبر اور کور کمانڈر کراچی نوید مختار کا آج اپیکس کمیٹی کا آخری اجلاس تھا کیونکہ وہ دونوں رخصت ہو رہے ہیں۔ آج کا اجلاس انتہائی خوشگوار ماحول میں ہوا جو بہت ہی اچھی بات ہے کیونکہ پاک فوج اہم قومی ادارہ ہے اور سیاستدان بھی اس ملک کے حکمران بنتے ہیں اور کبھی اپوزیشن میں ہوتے ہیں اس لئے ان کے درمیان خوشگوار تعلقات ہونے چاہئیں۔

انہوں نے کہا کہ آج اپیکس کمیٹی میں فیصلوں کی توثیق کی گئی ہے اور یہ فیصلہ ہوا ہے کہ کراچی آپریشن دہشت گردوں کے خاتمے اور مکمل امن و امان کے قیام تک جاری رہے گا۔ کراچی کی صورتحال کو یہاں تک لانے کیلئے پاک فوج، رینجرز، سندھ پولیس اور عوام سمیت سب نے بہت قربانیاں دی ہیں اور جانوں کے نذرانے پیش کئے ہیں۔

ان کا کہنا تھا جیسے ہم نے سیکیورٹی اداروں کی امن قائم کرنے پر تعریف کی ویسے ہی دونوں مہمانوں نے سول اداروں بالخصوص پولیس کی بہت تعریف کی ہے اور میں کراچی کے حالات بہتر بنانے پر جہاں ان کو مبارکباد دے رہا ہوں وہاں سندھ پولیس کو بھی مبارکباد دیتا ہوں۔

حکومت ہمارے مطالبات مانتی نظر نہیں آرہی ، 27دسمبر کے بعد نوازشریف کو لگ پتا جائے گا اپوزیشن کیا ہوتی ہے : بلاول بھٹو

ایک سوال کے جواب میں مشیر اطلاعات سندھ نے کہا کہ پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے 27 دسمبر کی جو تاریخ دی ہے اس کے بعد جو بھی ہو گا وہ کم از کم یوٹرن نہیں ہو گا۔ پیپلز پارٹی جب اپوزیشن کا کردار ادا کرنا چاہتی ہے تو پھر اس کا کون مقابلہ کر سکتا ہے؟ ان کا کہنا تھا کہ بلاول بھٹو زرداری نے کہا تھا کہ پانامہ لیکس کے معاملے پر عدالت نہیں جائیں گے اور آج دیکھ لیں کہ سب پچھتا رہے ہیں۔ دانش کا تعلق عمر سے نہیں ہے ، ”عمراں اچ کی رکھیا“ بلاول بھٹو کے خون میں سیاست اور دانش ہے اور وہ آنے والے وقت میں پاکستان کے لیڈر ہیں۔

مزید : کراچی /اہم خبریں