خاتون ایسی جماعت کے جلسے میں شرکت کے لئے پہنچ گئی کہ پتہ لگتے ہی شوہر نے فوری طلاق دے ڈالی

خاتون ایسی جماعت کے جلسے میں شرکت کے لئے پہنچ گئی کہ پتہ لگتے ہی شوہر نے فوری ...
خاتون ایسی جماعت کے جلسے میں شرکت کے لئے پہنچ گئی کہ پتہ لگتے ہی شوہر نے فوری طلاق دے ڈالی

نئی دلی(نیوز ڈیسک)بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کی نحوست کا اندازہ کیجئے کہ ایک خاتون کا گھر محض اس وجہ سے اُجڑ گیا کہ اس نے نریندر مودی کے سیاسی جلسے میں شرکت کی تھی۔ ویب سائٹ ورلڈ وائرڈ ویئرڈ نیوز کے مطابق بریلی شہر سے تعلق رکھنے والی خاتون فرح نریندر مودی کے جلسے میں شرکت کرکے گھر پہنچی ہی تھی کہ شوہر نے طلاق دے ڈالی۔ ستم ظریفی دیکھئے کہ اسی جلسے میں نریندر مودی نے فوری طلاق کی روایت کو غیر قانونی قرار دینے کا وعدہ کیا تھا۔ جلسے میں شرکت کے بعد خاتون گھر پہنچی تو اس کے شوہر نے تین بار طلاق کا لفظ کہہ کر اسے اپنی زندگی سے نکال دیا۔

اوبر کمپنی کا ڈرائیور مسافر کو لینے گیا، لیکن غلطی سے جسم فروش خاتون کو مسافر سمجھ کر بٹھالیا، پھر کیا ہوا؟ جان کر آپ بھی گھبراجائیں گے

خاتون کا کہنا ہے کہ اس کے شوہر نے اس پر اور بچوں پر تشدد بھی کیا اور ان سب کو گھر سے نکال دیا۔ دانش نامی شوہر نے اس واقعے پر ردعمل دیتے ہوئے اپنی اہلیہ پر قابل اعتراض لباس پہننے کسی اور شخص سے ناجائز تعلقات رکھنے کے الزامات بھی عائد کئے ہیں۔ دوسری جانب فرح کا کہنا ہے کہ یہ الزامات جھوٹ پر مبنی ہیں اور حقیقت یہ ہے کہ دانش نے خود اپنی ایک قریبی رشتہ دار خاتون سے ناجائز تعلق استوار کررکھا تھا اور اس تعلق کے نتیجے میں ان کے ہاں ایک بچے کی پیدائش بھی ہوچکی ہے۔

ڈیلی پاکستان کے یو ٹیوب چینل کو سبسکرائب کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

مزید : ڈیلی بائیٹس

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...