قابل طلبا میں لیپ ٹاپ کی تقسیم ، وزیر اعلیٰ کااحسن اقدام

قابل طلبا میں لیپ ٹاپ کی تقسیم ، وزیر اعلیٰ کااحسن اقدام
 قابل طلبا میں لیپ ٹاپ کی تقسیم ، وزیر اعلیٰ کااحسن اقدام

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

ذہین اورقابل طلبا میں لیپ ٹاپ کی تقسیم تعلیمی اداروں کو عصری تقاضوں سے روشناس کرانے کی جانب پنجاب حکومت کا ایک اہم اور موثر اقدام ہے ،جس سے طلباء کو نیا حوصلہ ملتا ہے اور تعلیمی میدان میں سبقت لے جانے کے رجحان میں بھی اضافہ ہوتا ہے ،کیونکہ تعلیم ہی کے فروغ سے ترقی کا خواب شرمندہ تعبیر ہوسکتا ہے اور ملک کو درپیش مسائل سے نجات حاصل کی جاسکتی ہے۔

لاہورمیں حمزہ شہباز شریف نے لیپ ٹاپ تقسیم کرنے کی تقریب سے خطاب میں طلبہ و طالبات کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا کہ کسی بھی قوم کے بہتر مستقبل کے لئے نوجوان نسل کا جدید تقاضوں کے مطابق تربیت یافتہ ہونا نہایت ضروری ہے اور اسی بات کو مدنظر رکھتے ہوئے حکومت کی طرف سے وزیرا علیٰ لیپ ٹاپ سکیم جیسے انقلابی اقدامات کئے جا رہے ہیں، تاکہ ہمارے طلبہ و طالبات بہترین تعلیمی و تربیتی عمل سے گزریں۔

ان کا کہناتھا کہ فخر ہے ایسے باپ کا بیٹا ہوں جس کے دامن پر کرپشن کا کوئی داغ نہیں،دہشت گردی ختم کرنے کے لئے تعلیم عام کرنا ہوگی۔

وزیر تعلیم رانا مشہود نے کہاکہ وزیر اعلیٰ پنجاب علم دوست ہیں۔وہ اب تک چار لاکھ 26 ہزار بچوں میں لیپ ٹاپ تقسیم کر چکے ہیں۔طالب علموں کا کہنا تھا کہ لیپ ٹاپ ان کی تعلیمی ضروریات کے لئے ناگزیر ہے۔

اس موقع پر میٹر ک کے امتحانات میں 91فیصد نمبر حاصل کرنے والے طلبہ وطالبات میں لیپ ٹاپ تقسیم کئے گئے۔وزیر اعلی پنجاب میاں شہباز شریف نے یوتھ کی تعلیم و ترقی سے متعلق بہترین اقدامات کی روایت قائم کی ہے جو قابل تحسین عمل ہے۔

انہوں نے طلبا و طالبات کو لیپ ٹاپ دے کر انفارمیشن ٹیکنالوجی کی انقلابی سوچ کو متعارف کروایا۔ ان کے استعمال سے ہمارے بچے دنیا میں ہونیوالی ریسرچ ،لیکچرز اورکورسز غرضیکہ ہر شعبہ سے متعلق علم و فہم سے استفادہ کر رہے ہیں ہونہار طالب علموں کا کہنا ہے کہ حکومت پنجاب نے لیپ ٹاپ کی صورت میں انہیں الہٰ دین کا چراغ دے دیا ہے ،جس سے وہ جب چاہیں اپنی تعلیمی ضروریات پوری کر سکتے ہیں۔

وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف کی طرف سے لیپ ٹاپ حاصل کرنے والے طلبا و طالبات نے کہا کہ آج کے دور میں لیپ ٹاپ جدید علوم کے لئے بنیادی ضرورت ہے،یہ غریب بچوں کی دسترس سے باہر تھا ،تاہم شہباز شریف نے لیپ ٹاپ کے حصول کا خواب شرمندہ تعبیر کر دیا۔ لیپ ٹاپ حاصل کرنا انکی زندگی کا بڑا خواب تھا۔

گزشتہ برس شہباز شریف نے پنجاب کے طلبہ میں 7ارب روپے مالیت کے1 لاکھ 15ہزار لیپ ٹاپ تقسیم کرنے کااعلان کرتے ہوئے کہا تھا کہ اگلے سال ڈیڑھ لاکھ لیپ ٹاپ کا مزید فنڈ رکھا جائے گا۔ لیپ ٹاپ تقسیم کرنے پر تنقید کے نشتر برسائے گئے۔

کہا گیا کہ شہباز شریف لیپ ٹاپ تقسیم کر کے طلباء کو ہمنوا بنارہے ہیں۔ حالانکہ نوجوانوں کو لیپ ٹاپ دے کر ملک میں میرٹ کی بحالی اور طلبہ و طالبات میں محنت کاجذبہ پیدا کرنا مقصود ہے۔ جدید ٹیکنالوجی نے نوجوانوں کوبااختیاربنایا۔ تعلیم کے ساتھ طلبہ دیگر سرگرمیوں میں بھی دلچسپی ظاہر کریں۔

لیپ ٹاپ سکیم کے چوتھے مرحلے کے تحت، ایک لاکھ پندرہ ہزار سے زائد طلباء میں لیپ ٹاپ تقسیم کیے جائیں گے۔اس اسکیم کے پہلے تین مراحلوں کو پہلے ہی ختم کر دیا گیا ہے اور ان تین مرحلوں میں حکومت نے 20 ارب مالیت کے دس لاکھ تین ہزار لیپ ٹاپ ذہین اور لائق طلباء میں تقسیم کر دئیے ہیں۔

فیز فورمیں میٹرک امتحانات میں نوے فیصد نمبر لینے والے طلبہ وطالبات لیپ ٹاپ لینے کے اہل ہوں گے۔ دینی مدارس کے بھی 2 ہزار طلبا کو لیپ ٹاپ ملیں گے۔

وزیراعلیٰ یہ بھی اعلان کر چکے ہیں کہ غریب گھرانوں کے پوزیشن ہولڈرز بچے پنجاب ایجوکیشنل انڈومنٹ فنڈکے سکالرز ہوں گے اور یہ طالب علم جہاں تک تعلیم حاصل کرنا چاہیں گے انہیں تعلیم دلائی جائے گی۔جب تک یہ طلبا و طالبات محنت کے ذریعے اپنی پوزیشنیں برقرار رکھیں گے اور تعلیمی میدان میں آگے بڑھتے رہیں گے انہیں تعلیمی فنڈز کے ذریعے وسائل کی فراہمی کا سلسلہ جاری رہے گا۔ انتہائی مشکل حالات اورمالی پریشانیوں کے باعث قوم کے ان نونہالوں نے پوزیشنیں حاصل کرکے کارہائے نمایاں سرانجام دئیے ہیں جس پر پوری قوم کو فخرہے۔ پنجاب حکومت نے فروغ تعلیم کے لئے انقلابی حکمت عملی اپنائی ہے اورقوم کے مستقبل کو زیور تعلیم سے آراستہ کرنے کے لئے بے مثال اقدامات کیے ہیں ۔

وزیر اعلیٰ لیپ ٹاپ سکیم میں مکمل شفافیت اور میرٹ کو مدنظر رکھتے ہوئے قابل طلباء کا انتخاب کیا گیا۔ اب یہ ان طلبہ و طالبات کا فرض ہے کہ پوری محنت اور لگن سے عصر حاضر کی ضروریات کے مطابق تعلیم حاصل کریں اور ملک و قوم کی ترقی میں اپنا بھرپور کردار ادا کریں۔ نوجوان ہمارامستقبل اور امید ہیں۔ نوجوان تعلیم کے شعبے میں جدید وسائل سے فائدہ اٹھاتے ہوئے آگے بڑھیں اور پاکستان کا نام دنیا میں روشن کریں۔

مزید : کالم