آل پاکستان انجمن تاجران کاتجارتی خسارے میں 29فیصد اضافے پر تشویش کا اظہار

آل پاکستان انجمن تاجران کاتجارتی خسارے میں 29فیصد اضافے پر تشویش کا اظہار

لاہور (آن لائن)آل پاکستان انجمن تاجران نے تجارتی خسارے میں گزشتہ سال کی نسبت امسال جولائی تا نومبر 29فیصد اضافے پر تشویش کا اظہار رتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت اس حوالے سے ہنگامی بنیادوں پر لائحہ عمل مرتب کرے۔ صدر اشرف بھٹی نے اپنے بیان میں کہا کہ گزشتہ سال 11ارب69کروڑ10لاکھ ڈالر کے مقابلے میں امسال تجارتی خسارہ 15ارب ڈالر تک پہنچنے سے ثابت ہوتا ہے کہ مرتب کردہ پالیسیوں اور اس پر عملدرآمد میں کہیں نہ کہیں ضرور خامیاں موجود ہیں۔

جنہیں سامنے آنا چاہیے ۔ حکومت سے بارہا مطالبات کر چکے ہیں کہ پالیسیوں کی تشکیل میں صرف چندافسران تک محدود رہنے کی بجائے تمام اسٹیک ہولڈرز کو مشاورت میں شامل کیا جائے ۔ انہوں نے کہا کہ معاشی استحکام کے لئے پالیسیوں پر نظر ثانی کی جائے بصورت دیگر آنے والے سالوں میں پانی سر سے گزر جائے گا ۔ انہوں نے کہا کہ درآمدات، برآمدات اورٹیکسیشن کے حوالے سے اے پی سی کی طرز پر کانفرنسز کا انعقاد کر کے جامع دستاویزات مرتب کی جائیں اور پھر اس کے مطابق پالیسیاں ترتیب دی جائیں۔ تاجر وں نے ملک او رمعیشت کیلئے ہمیشہ اپنا مثبت کردار اداکیا ہے اور اب بھی ذمہ داری لینے اور اد اکرنے کیلئے تیار ہیں لیکن حکومت بھی اپنی ذمہ داریاں نبھانے کا عہد کرے اور عملی اقدامات کر کے دکھائے ۔

مزید : کامرس

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...