مسئلہ فلسطین پر اسلامی ممالک کے ساتھ ہیں : ایران

مسئلہ فلسطین پر اسلامی ممالک کے ساتھ ہیں : ایران

 اسلام آباد ( آن لائن ) پاکستان میں تعینات ایران کے سفیر مہدی ہنردوست نے کہا ہے ایران ، پاکستان کیساتھ تعلقات کو اہمیت دیتا ہے ، امریکہ اور دیگر مغربی ممالک اسلامی ممالک کو تقسیم کرکے مشرقی وسطیٰ پر حکومت کرنا چاہتے ہیں، افغانستان میں امریکی افواج کے آنے کے بعد خطے میں منشیات اور انسانی سمگلنگ کا کام زیادہ تیز ہوا ہے جس سے خطے کی صورتحال خراب ہورہی ہے، فلسطین کی آزادی کیلئے ایران اسلامی ممالک کیساتھ ملکر اپنا کردار ادا کرے گا، پاکستان کیساتھ باہمی تجارت کا حجم ڈیڑھ ارب ڈالر سے زیادہ ہے، ٹاپی گیس پائپ لائن منصوبہ کی تکمیل سے پاکستان کی قسمت بدل سکتی ہے۔ ایران نے سعودی عرب کیساتھ تعلقات کو بہتر کرنے کیلئے ہمیشہ کوشش کی ہے البتہ اس معاملے میں سعودی عرب کی جانب سے کبھی مثبت جواب نہیں ملا۔آن لائن کو دئیے گئے خصوصی انٹرویو میں ایرانی سفیرکا مزید کہنا تھا مسلمان ممالک کے باہمی تعلقات کی خرابی کی وجہ سے فلسطین ، کشمیر اور دیگر ممالک میں مسلمانوں پر مظالم کا سلسلہ جاری ہے، افسوسناک امرہے بعض اسلامی ممالک اسرائیل اور امریکہ کے آلہ کار کے طور پر کام کررہے ہیں، تمام اسلامی ممالک کے سربراہان نے مقبوضہ بیت المقدس کے بارے میں امریکی صدر کے حالیہ بیان پر مذمتی بیان جاری کئے ہیں البتہ موجود ہ صورتحا ل میں بیان بازی کے بڑھ کر کام کرنیکی ضر و ر ت ہے ، اس سلسلے میں ایران اپنا لائحہ عمل تیار کررہا ہے اور کمزور مسلمان ممالک کی حفاظت کیلئے اپنا کردار ادا کرے گا، پاکستان نہ صرف برادر اسلامی بلکہ ہمسایہ ملک ہے اور ہمسایہ تبدیل نہیں کیا جاسکتا ، انہوں نے اس بات پر افسوس کا اظہار کیا کہ بارہ سال پہلے ٹاپی گیس پائپ لائن منصوبہ پر دستخط کئے گئے البتہ پاکستان اس معاملے میں سنجیدہ نظر نہیں آتا،حالانکہ ان سالوں کے دوران پاکستان نے ایل ، این ، جی کیلئے قطر کیساتھ معاہد ہ طے کیا۔ ٹاپی گیس پائپ لائن منصوبہ خطے کے ممالک کیلئے گیم چینجر ثابت ہوسکتا ہے ، منصوبے کی تکمیل کیلئے پاکستان کی طرف سے سردمہر ی پر افسوس ہے۔ ایران پر بین الاقوامی پابندیوں کی وجہ سے پاکستان سمیت دیگر ممالک کیساتھ باہمی تجارت میں بہت سی مشکلات کا سامنا کرناپڑا البتہ ایران نے کسی کے قسم کی زیادتی کا تسلیم نہیں کیا، ایران اور پاکستان دہشتگردی کیخلاف جنگ کا تجربہ رکھتے ہیں ،اور خطے میں پائیدار امن ، دہشتگردی پر قابو پانے کیلئے ایران ، پاکستان ساتھ ملکر کام کرنا چاہتا ہے، ایران مسلمان ملک کی حیثیت سے مکہ مکرمہ اور مدینہ کی حفاظت کرنے کیلئے ہردم تیار ہے ، سعودی عرب اور یمن جنگ پر ایران چاہتا ہے مظلوم کی داد رسی کی جائے البتہ بین الاقوامی قوتیں ا س معاملے کو اپنے مفادات کی وجہ سے طول دینا چاہتی ہیں۔ اسلامی ممالک کو ملکر ان طاقتوں کا سامنا ،بڑے مسلمان ممالک کو چھوٹے ممالک کی مدد کیلئے تیار رہنا چاہیے۔

ایران

مزید : علاقائی