حلقہ بندیاں آئینی ترمیم معاملہ ، سینیٹ میں پی پی پی ڈٹ گئی

حلقہ بندیاں آئینی ترمیم معاملہ ، سینیٹ میں پی پی پی ڈٹ گئی

اسلام آباد (صباح نیوز)حلقہ بندیوں کی آئینی ترمیم کے معاملے پر وفاق اور سندھ کے درمیان منگل کو اہم رابطہ ہوا وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے پارٹی موقف کا اعادہ کیا جبکہ تحفظات دور نہ ہونے کی وجہ سے سینیٹ میں پیپلزپارٹی کی پارلیمانی جماعت ڈٹ گئی ہے اور با ر ہ نکا تی ایجنڈا سے پیچھے ہٹنے سے انکار کردیا ۔ذرائع کے مطابق وفاقی حکومت کی ایک انتہائی اعلیٰ شخصیت نے حلقہ بندیوں کی آئینی ترمیم کے معاملے پر گزشتہ روز وزیراعلیٰ سندھ سے رابطہ کیا ان سے آئینی ترمیم کی منظوری کیلئے کردار ادا کرنے کو کہا جس پرسید مراد علی شاہ نے کہا وہ اس بارے میں پارٹی قیادت سے رابطہ کر کے وفاق کو اپنے موقف سے آگاہ کریں گے ،مشترکہ مفادات کونسل میں ہونیوالے فیصلوں پر بھی گفتگو ہوئی،دوسری طرف سینیٹ میں مردم شماری کے معاملے پر مطالبات میں کوئی پیشرفت نہ ہونے پر پیپلز پارٹی کی پارلیمانی جماعت ڈ ٹ گئی ہے ،مطالبات میں ڈیموگرافک قومی کمیشن کے قیام کا مطالبہ سر فہرست ہے، پیپلز پارٹی نے ادارہ مردم شماری پر عدم اعتماد کر نے سمیت مردم شماری کے پانچ فیصد نتائج عالمی معیار کے مطابق تھرڈ پارٹی سے صاف شفاف جانچ پڑتال، دیگر شہروں سے آنیوالے افراد کے مقامی علاقوں میں اندراج سمیت بارہ مطالبات شامل ہیں اور حکمران جماعت پر واضح کر دیا گیا ہے ان مطالبات سے پیچھے نہیں ہٹا جا سکتا ۔

حلقہ بندیاں معاملہ

مزید : صفحہ اول

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...