قومی اسمبلی ، فاٹا اصلاحا ت میں پیش ہونے تک متحدہ اپوزیشن کا اجلاس کے بائیکاٹ کا فیصلہ

قومی اسمبلی ، فاٹا اصلاحا ت میں پیش ہونے تک متحدہ اپوزیشن کا اجلاس کے ...

اسلام آباد(آئی این پی) قومی اسمبلی اجلاس میں دوسرے روز بھی فاٹا اصلاحات بل پیش نہ کئے جانے پر اپوزیشن نے ایوان سے واک آؤٹ کرتے ہوئے بل ایوان میں لانے تک اجلاس کا بائیکاٹ جاری رکھنے کا فیصلہ،ایجنڈے سے فاٹا اصلاحات بل نکالنے پر اپوزیشن کا ایوان سے دوسرے روز بھی واک آؤٹ،ایک بار پھر اپوزیشن کی نشاندہی پر کورم ٹوٹ گیا،ڈپٹی سپیکر مرتضیٰ جاوید عباسی نے کورم پورا نہ ہونے پر اجلاس آج تک کیلئے ملتوی کردیا ۔تفصیلات کے مطابق اپوزیشن کی جانب سے حکومتی نشستوں پر وزراء اور اراکین کی عدم موجودگی پر حکومت کو سخت تنقید کا نشانہ بنایا گیا ۔قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف سید خورشید شاہ نے کہا کہ حکومت میں سیاسی وژن ہوتا ہے مگر وزراء اور وزیراعظم میں روابط کا فقدان ہے جو بھی آتا ہے انفرادی بات کرتا ہے جس سے نقصان پارلیمنٹ کاہوتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم پارلیمنٹ کا احترام کرتے ہیں کبھی ڈائس کا گھیراؤ کیا نہ کریں گے جبکہ مجھے تقریر میں جوش اور مکے دکھانے کا شوق نہیں تاہم جب تک بل نہیں لایا جاتا ہم اس توہین پر واک آؤٹ کرتے رہیں گے، خالی ایوان ہے اور نجی ممبر ڈے ہے مگر حکومت کی نشستیں خالی ہیں پہلی دفعہ نہیں "ایک لکھاں دا بٹ راجہ" اور "ہاتھی کے پاؤں میں سب کا پاؤں ہیں"۔ وزیر پارلیمانی امور شیخ آفتاب نے کہا کہ جتنے بھی پارلیمانی لیڈر ہیں ان کے ساتھ جمعہ کے روز وزیراعظم ناشتے کی میز پرفاٹا صلاحات بل کو افہام و تفہیم سے حل کرینگے،انہوں نے کہا کہ خورشید شاہ کی" بات تو سچ ہے مگر بات ہے رسوائی کی" ہر حکومت یہ چاہتی ہے کہ حالات بہتر ہوں۔پی ٹی آئی کے رکن اسمبلی اسد عمر نے کہا کہ طے کر لیں ہمیں تمام معاملات پارلیمینٹ میں حل کرنے ہیں یا باہر ؟ 22دن دھرنا دیا گیا اس کا جواب ابھی تک نہیں آیا۔جماعت اسلامی کے صاحبزادہ طارق اللہ نے کہا کہ آخری وقت میں فاٹا اصلاحات کو ایجنڈے سے نکالنا فاٹا کے ساتھ ظلم ہے لہٰذاجب تک فاٹا اصلاحات کو ایجنڈے میں شامل نہیں کیا جاتا ہم واک آؤٹ کریں گے۔ ایم کیو ایم کے رہنما شیخ صلاح الدین نے کہا کہ نجی ممبر ڈے کے موقع پر ایم کیو ایم کے اراکین محنت کرتے ہیں بل لیکر آتے ہیں مگر حکومت سنجیدہ نہیں ہے پارلیمنٹ کے وقار کو مدنظر رکھا جائے، اجلاس میں وزیرستان میں دو فوجی جوانوں کی شہادت پر فاتحہ خوانی کی گئی۔

قومی اسمبلی

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) متحدہ اپوزیشن نے فاٹا اصلاحات کے معاملے پر حکومت سے مذاکرات کے لیے کمیٹی تشکیل دے دی۔نجی ٹی وی کے مطابق اپوزیشن لیڈر خورشید شاہ کی سربراہی میں اپوزیشن رہنماؤں کا اجلاس ہوا جس میں فاٹا اصلاحات کے معاملے پر ایک کمیٹی تشکیل دی گئی ہے جس میں مختلف جماعتوں کے نمائندوں کو شامل کیا گیا ہے۔متحدہ اپوزیشن کی کمیٹی کے سربراہ خورشید شاہ ہوں گے جبکہ اس میں پیپلزپارٹی سے فرحت اللہ بابرہ، اعجاز جاکھرانی، جماعت اسلامی کے سراج الحق، صاحبزادہ طارق اللہ، ایم کیوایم پاکستان کے شیخ صلاح الدین، میاں عتیق اور فاٹا کے شاہ جی گل آفریدی شامل ہیں۔پاکستان تحریک انصاف بھی کمیٹی کے لیے اپنے دو نمائندوں کے نام بھجوائے گی۔

کمیٹی تشکیل

مزید : صفحہ اول

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...