شبقدر میں گیس کی ناروا لوڈشیڈنگ ،امور خانہ داری متاثر

شبقدر میں گیس کی ناروا لوڈشیڈنگ ،امور خانہ داری متاثر

شبقدر( نمائندہ خصوصی)شبقدر میں سوئی گیس بندش سے معمولی زندگی معطل،شدید سردی میں گیس بندش کے باعث معمر افراد اور مریضوں کو سخت مشکلات کا سامنا ، سوئی گیس ہماری بنیادی ضرورت ہے سکول بچے بغیر ناشتے سکول جاتے ہیں متعدد بچے بیمار پڑ گئے ،حکومت نے سوئی گیس مکمل طور بند کر دی ہیں جو سراسر ظلم ہے حکومت سوئی گیس کی فراہمی یقینی بنائے بصورت دیگر علاقہ عوام سخت احتجاجی مظاہروں پر مجبور ہو جائینگے عوامی حلقے، تفصیل کے مطابق گزشتہ ایک ہفتے سے تحصیل شبقدر میں سوئی گیس مکمل طور پر بند کر دیا گیا ہے جس کی وجہ سے معمولات زندگی مفلوج ہو گئی ہے علاقہ کے تمام سوئی گیس صارفین ہر مہینے بل بروقت جمع کرتے ہیں نہ کو ئی فالٹ نہ حکومتی اعلان نہ بقایا جات اس کے باوجود دن رات گیس بندش سمجھ سے بالاتر ہیں کئی د ن ہو گئے سکول بچے باسی روٹیوں پر ناشتہ کر کے سکول جاتے ہیں اور زیادہ تر سکول طلباء اور طالبات بغیر ناشتے سکول جا تے ہیں علاقہ گھمبیر مسائل سے دوچار ہیں لیکن علاقہ مکین اس سخت سردی میں اب صرف سوئی گیس بندش کی تشویش کا اظہار کر رہے ہیں علاقہ عوام کا کہنا ہیں حکومتی ا علان کے باوجود کہ ملک کے کسی بھی حصے میں سوئی گیس لو ڈشیڈنگ کا اعلان نہیں کیا گیا اس کے با وجود شبقدر میں سوئی گیس مکمل طور پر بند ہیں عوام صوبائی حکومت سے بھی سخت ناراض اور مایوس ہیں کیونکہ صوبائی حکومت مرکزی حکومت سے اپنے صوبے کے عوام کے حقوق حاصل نہیں کر سکتے منتخب ایم پی اے اور ایم این اے بھی مکمل طور مسائل کے حل میں عدم دلچسپی پر عوام کا سامنا نہیں کر سکتے جس کے باعث علاقہ عوام سخت نااُمید ہو چکے کیونکہ مسئلے کو ہر فورم پر اُٹھا یا گیا اور سوئی گیس کا مسئلہ حل ہونے کی بجائے وقت کیساتھ ساتھ مذید گھمبیر ہوتا جا رہا ہیں حکومت اور اعلیٰ حکام کی طرف سے نوٹس نہ لینے پرشبقدر کے مختلف علاقوں مٹہ مغل خیل،ایم سی ون حلیم زئی ،زوڑ کندے،پہلوان قلعہ ،شبقدر بازار،بہلول خیل اور دیگر علاقوں کے عوام نے احتجاجی مظاہروں کا فیصلہ کر لیا ہے اور تہیہ کیے ہوئے ہیں کہ اگر سوئی گیس کا مسئلہ حل نہیں ہوا تو آئندہ ماہ سے سوئی گیس بلوں کو آگ لگا کر احتجاجی مظاہروں میں جلائینگے اور احتجاجی مظاہروں کا یہ سلسلہ جاری رہے گا

مزید : پشاورصفحہ آخر