اندھے قتل کیس کا سراغ لگا کر ملزموں کو کٹہرے میں لانا اچھی پولیسنگ کا منہ توڑ بولتا ثبوت ہے :صلاح الدین

اندھے قتل کیس کا سراغ لگا کر ملزموں کو کٹہرے میں لانا اچھی پولیسنگ کا منہ توڑ ...

پشاور( کرائمز رپورٹر)انسپکٹر جنرل آف پولیس خیبر پختونخوا صلاح الدین خان نے آج سنٹرل پولیس آفس پشاور میں منعقدہ ایک تقریب میں ضلع مردان، سوات، بونیر اور ہنگو کے پولیس افسروں و جوانوں کوا غواء برائے تاوان، اندھے قتل کے مقدمات کا سُراغ لگانے اور منشیات کی سمگلنگ کی کوششوں کوناکام بنانے پرنقدانعامات اور توصیفی اسناد سے نوازا۔تفصیلات کے مطابق مردان پولیس نے 6 سالہ معصوم بچی کے قتل کے ملزم کوآلہ قتل سمیت گرفتار کیا تھا۔ ملزم نے عدالت میں اپنے جرم کا اعتراف بھی کیاہے۔ مردان پولیس نے ایک اور کاروائی میں بنک منیجر سے گن پوائنٹ پر 40 لاکھ روپے چھیننے کے ملزم کو گرفتار کرکے اُن سے لوٹی ہوئی رقم بھی برآمد کی تھی۔ بعد ازاں ملزم نے عدالت میں اعتراف جرم بھی کیا۔ اسی طرح سوات پولیس نے ایک کاروائی کے دوران منشیات کی سمگلنگ کو ناکام بناتے ہوئے بھاری مقدار میں منشیات برآمد کرکے ملزموں کو گرفتار کیا تھا۔ جبکہ بونیرپولیس نے دو مختلف کاروائیوں میں دو اندھے قتل کے مقدمات کا سُراغ لگا کر اسمیں ملوث ملزموں کو آلہ قتل سمیت گرفتار کیا تھا۔ اسی طرح ہنگو پولیس نے پرائیوٹ سکول کے ایک 20 سالہ ٹیچر کے اغواء اور بعد ازاں اُن کوقتل کرنے کے تین ملزموں کو گرفتار کیاتھا۔ تینوں ملزموں نے عدالت کے روبرو اعتراف جرم بھی کرلیا ہے۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے آئی جی پی صلاح الدین خان نے ان تمام واقعات میں پولیس کے پروفیشنلزم اور دن رات سخت محنت کوسراہا۔آئی جی پی نے کہا کہ اندھے کیسوں کا سُراغ لگا کر ملزموں کوآلہ قتل سمیت گرفتار کرنا پولیس کی پیشہ ورانہ کاوشوں اور اچھی پولیسنگ کا منہ بولتا ثبوت ہے۔ آئی جی پی نے انعام یافتہ گان پر زور دیا کہ وہ ہر قسم کے جرائم میں ملوث افراد کے خلاف گھیرا تنگ کرکے اُن کو قانون کے کٹہرے میں لانے کے لیے اپنی تمام توانائیاں بروئے کار لائیں۔ اس موقع پرآئی جی پی نے مردان پولیس کے ڈی ایس پی سٹی خان خالد خان، سب انسپکٹرز مقدم خان، نور محمد اورانور خان، اے ایس آئیز جاوید خان اور آصف خان اور لیڈی کانسٹیبل نجمہ ،سوات پولیس کے ڈی ایس پی بیرزر بادشاہ، بونیر پویس کے انسپکٹر حسین زادہ، سب انسپکٹر شیر علی اور ہینڈ کانسٹیبل قمرزمان اور ہنگو پولیس کے ایس ڈی پی اُو عمر حیات ، سب انسپکٹر شاہ دوران، سب انسپکٹر نعمت اللہ اور کانسٹیبلان عظمت علی شاہ، آصف شہزاد اور سمیع اللہ کو نقد انعامات اور توصیفی اسناد سے نوازا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر