ایجنڈے سے فاٹا اصلاحات کا بل نکالنا قبائلی عوام سے ناانصافی ہے، قبائلی مشران

ایجنڈے سے فاٹا اصلاحات کا بل نکالنا قبائلی عوام سے ناانصافی ہے، قبائلی مشران

خیبر ایجنسی ( بیوروپورٹ)قومی اسمبلی اجلاس کے ایجنڈے سے فاٹا اصلاحات بل نکالنا قبائلی عوام کے ساتھ ظلم ہے ،فاٹا کے عوام نے ملک کیلئے بیش بہا قربانیاں دی ہیں،فاٹا کو کے پی میں ضم کرنے کیلئے ہر حد تک جائینگے اورقائد تحریک اصلاحات شاہ جی گل آفریدی کی قیادت میں اسلام آباد کو جام کرنے پر مجبور ہونگے۔الحاج گروپ کے نمائندوں کی پریس کانفرنس سے خطاب۔لنڈی کوتل پریس کلب میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ایم این اے الحاج شاہ جی گل آفریدی کے نمائندوں قاری سید عالم،شاہ خالدشینواری ،نثار آفریدی، حاجی لاج بر اورمنتظر خان ودیگر نے کہا کہ ملک کے لئے قبائل نے قیمتی جانوں کے نظرانے پیش کئے اوربہت سارے لوگ اپنے ملک میں مہاجر ہو گئے، گھر مساجد تعلیمی ادارے سب کچھ تباہ ہوگئے لیکن پھر بھی ہم پاکستان زندہ باد کا نعرہ لگا رہے ہیں جو کہ قبائلی عوام کی حب الوطنی کا واضح ثبوت ہے انہوں نے کہا کہ قبائل کے پی کے میں انضمام چاہتے ہیں پاکستان کا آئین چاہتے ہیں پاکستان کا قانون چاہتے ہیں اس ملک کوگلے سے لگا رہے ہیں لیکن حکومت وقت ہم باغی بنا رہی ہے ہمیں دہشتگرد بنارہی ہے، علاقہ غیر کا تاثر دیا جارہا ہے لیکن ہم غیر نہیں بننا چاہتے اسلئے جلد از جلد فاٹا کو کے پی میں ضم کیا جائے جو لوگ قیام پاکستان کے منکر ہیں اور پاکستان کے خلاف سازشوں میں مصروف رہے ہیں ان کو تو معاف کیا جاتا لیکن افسوس کے ساتھ کہنا پڑتا ہے کہ مسلم لیگ ن نے قبائل کے خون کے ایک دوکاندار مولانا فضل الراحمان اور دوسرا ملک دشمن سازشی ایجنٹ محمود اچکزئی کے کہنے پر ایک بار پھر قبائل کی امیدوں پر شب خون مارکر قبائلوں کو حقوق سے محروم کر دیا جبکہ مسلم لیگ ن کے چور اور ڈاکو حکومت نے اپنے چوری کئے گئے مال کو بچانے کے لئے مولانا فضل الرحمن اور محمود اچکزئی کا سہارا لیا ہے لیکن قبائلی عوام کی بددعائیں اپ کی حکومت لے ڈوبے گی انہوں نے کہا کہ مولانا فضل الراحمن اور محمود اچکزئی غیروں کے اشاروں پر پختونوں کے اتحاد کے مخالف ہیں وہ صرف زبان سے علیحدہ صوبے کا مطالبہ کرتے ہیں لیکن ابھی تک علیحدہ صوبے کی تحریک کے لئے ایک جلسہ نہیں کیا اور یہ سارے ہتھکنڈے صرف اپنی بازاری سیاست کے لئے استعمال کررہے ہیں یہ سب کچھ ایف سی آر بچانے کے مترادف ہیں مولانا فضل الرحمن اور چند مراعات یافتہ طبقہ اب اس تحریک کا راستہ نہیں روک سکتا ہے انہوں نے کہا کہ اس کا بدلہ فاٹا کے عوام ان دشمنوں سے 2018 میں ووٹ کے ذریعے لیں گے ان کو بد ترین شکست کا سامنا کرنا پڑے گا آخر میں انہوں نے کہا کہ ہم اپنے قائد تحریک اصلاحات اور فخر قبائل الحاج شاہ جی گل کو ہر قسم جانی اور مالی قربانی کی یقین دہانی کراتے ہیں اور ان کے ایک میسج پر اسلام آباد کا گھیراو کریں گے۔۔

مزید : پشاورصفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...