آزاد کشمیر میں پاکستان کا ختم نبوتؐ قانون من و عن نافذ کر نیکا فیصلہ ، 5رکنی کمیٹی تشکیل

آزاد کشمیر میں پاکستان کا ختم نبوتؐ قانون من و عن نافذ کر نیکا فیصلہ ، 5رکنی ...

مظفرآباد(بیورورپورٹ)آزاد جموں وکشمیر کابینہ نے ختم نبوتﷺسے متعلق پاکستان میں نافذ قوانین کو من و عن آزادکشمیر میں نافذ کرنے کے لیے وزیر قانون کی سربراہی میں 5رکنی کمیٹی تشکیل دیے جانے کی منظوری دی ہے جبکہ آزادکشمیر میں نافذ ٹیکسز کو کم کر کے پنجاب کے برابر کرنے اور آزاد خطہ میں سٹمپ ڈیوٹی ،زمین کی منتقلی پر ٹیکسز ،رجسٹریشن ،لوکل ٹیکسز کا جائزہ لینے کے لیے وزیرخزانہ کی سربراہی میں کمیٹی قائم کی گئی ہے جو ایک ماہ کے اندر اپنی رپورٹ پیش کرے گی کابینہ اجلاس میں آزادکشمیر احتساب بیورو ترمیمی ایکٹ اور کریمینل لاء ترمیمی ایکٹ 2017کی منظوری بھی دے دی ہے احتساب بیورو ترمیمی ایکٹ کے تحت ڈپٹی چیئرمین احتساب بیورو کا عہدہ ختم کر دیا گیا ہے کریمینل لاء ترمیمی ایکٹ کے تحت ونی ،سوارہ اور جبری شادیوں کے خلاف قید و جرمانے کی سزا تجویز کی گئی ہے کابینہ نے آزادکشمیر میں سرکاری آٹے پر فی من 100روپے سبسڈی برقرار رکھنے کا فیصلہ کیا ہے ترقیاتی ادارہ جات کو دی جانے والی گرانٹ ان ایڈ میں 10فیصد کٹوتی کے فیصلے سے متعلق کمیٹی تشکیل دے دی گئی ہے جو تمام امور کا جائزہ لے کر رپورٹ پیش کرے گی،منگلا اپ ریزنگ منصوبے کے تحت پیکیج نمبر 5،7اور 8میں اضافی ادائیگیوں کا سخت نوٹس لیا گیا ہے اور فوری ریکوری کی ہدایت کی گئی میرپور واٹر سپلائی سکیم اور سیوریج کے منصوبے کی فوری تکمیل کا فیصلہ کیا گیا ہے آزادکشمیر کابینہ کے اجلاس میں سرکاری آفیسران کے خلاف جاریہ انکوائریز کو فوری مکمل کرنے کی ہدایات جاری کی گئی ہیں اور متعلقہ حکام کو جملہ انکوائریز کی تکمیل کے لیے 2ماہ کا وقت دیا گیا ہے کابینہ اجلاس میں الاٹ شدہ زمینوں کی فروخت پر ٹیکسز سے متعلق وزیر مال کی سربراہی میں کمیٹی تشکیل دیئے جانے کی منظوری دی گئی ہے آزادکشمیر کابینہ کا اجلاس وزیراعظم آزاد حکومت ریاست جموں وکشمیر راجہ محمد فاروق حیدر خان کی صدارت میں وزیراعظم سیکرٹریٹ میں منعقدہوا اجلاس میں سینئر وزیر فزیکل پلاننگ و ہاؤسنگ چوہدری طارق فاروق ،وزیر قانون و پارلیمانی امور راجہ نثار احمد خان ،وزیر مواصلات چوہدری محمد عزیز ،وزیر خزانہ صحت و منصوبہ بندی و ترقیات ڈاکٹر نجیب نقی ،وزیر جنگلات و اکلاس سردار میر اکبر خان ،وزیر صنعت و سماجی بہبود محترمہ نورین عارف ،وزیر ہائیر ایجوکیشن و تعلیم سکول بیرسٹر سید افتخار علی گیلانی ،وزیر مال سردار فاروق سکندر ،وزیر خوراک سید شوکت علی شاہ ،وزیر سپورٹس یوتھ و کلچر چوہدری چوہدری محمد سعید ،وزیر ٹرانسپورٹ و بحالیات ناصر حسین ڈار ،سینیئرمشیر حکومت خان بہادر خان ،چیف سیکرٹری آزادکشمیر ڈاکٹر اعجاز منیر ،ایڈیشنل چیف سیکرٹری ترقیات ڈاکٹر سید آصف شاہ ،سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو فیاض علی عباسی ،سیکرٹری مالیات فرید تارڑ ،پرنسپل سیکرٹری احسان خالد کیانی ،سیکرٹری اطلاعات منصور قادر ڈار ،سیکرٹری سروسز چوہدری لیاقت حسین ،سیکرٹری فزیکل پلاننگ و ہاؤسنگ ،سیکرٹری خوراک راجہ عباس،سیکرٹری قانون ارشاد قریشی اور دیگر متعلقہ حکام نے شرکت کی آزادکشمیر کابینہ کے اجلاس میں تحفظ نامور رسالت ﷺاور ختم نبوت ﷺسے متعلق پاکستان میں نافذ قوانین کو آزادکشمیر میں نافذ کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے اس سلسلہ میں وزیر قانون راجہ نثار احمد خان کی سربراہی میں 5رکنی کمیٹی تشکیل دی گئی ہے کمیٹی کے اراکین میں ممبر اسمبلی پیر سید علی رضا بخاری ،ممبر اسمبلی راجہ محمد صدیق اور سیکرٹری قانون ارشاد قریشی اور ایڈووکیٹ جنرل رضا علی خان شامل ہیں ترقیاتی ادارہ جات کے ملازمین کو تنخواہوں کی ادائیگی یقینی بنانے کے لیے گرانٹ ان ایڈ میں 10فیصد کٹوتی کے معاملے پر کمیٹی تشکیل دی گئی ہے آزادکشمیر میں رائج ٹیکسز اور لوکل ٹیکسز کے جائزہ کے لیے وزیر خزانہ ڈاکٹر نجیب نقی کی سربراہی میں کمیٹی قائم کر دی گئی ہے کمیٹی میں وزیر مال سردار فاروق سکندر ،سینئرممبر بورڈ آف ریونیوفیاض علی عباسی ،سیکرٹری مالیات فرید تارڑ اور سیکرٹری قانون ارشاد قریشی شامل ہیں یہ کمیٹی ایک ماہ کے اندر رپورٹ پیش کرے گی آزادکشمیر کابینہ کے اجلاس میں منگلا اپ ریزنگ پراجیکٹ کے تحت پیکیج 5،7اور 8کے منصوبوں کی تکمیل کے لیے فوری اقدامات کا فیصلہ کیا گیا ہے منگلا اپ ریزنگ پراجیکٹ کے تحت میرپور میں واٹر سپلائی ،سیوریج اور دیگر منصوبوں کی تکمیل کے لیے 2ارب روپے سے زائد کی رقم درکار ہے جبکہ پی ایم یو کے پاس 45کروڑ اور وفاقی حکومت کے پاس 1ارب روپے کی رقم موجود ہے یہ رقم فوری طور پر تصرف میں لائی جائے گی تاکہ عوامی منصوبے مکمل ہو سکیں کابینہ اجلاس میں میرپور میں متذکرہ منصوبوں پر کام کرنے والی تعمیراتی کمپنی کو 1ارب 30کروڑ روپے کی اضافی ادائیگی کا سخت نوٹس لیا گیا اور اضافی رقم کی ریکوری کے لیے جاندار اقدامات کا فیصلہ کیا گیا ہے کابینہ اجلاس میں آزادکشمیر میں سرکاری آٹے پر 100روپے فی من سبسڈی برقرار رکھنے کا فیصلہ کیاگیا ہے کابینہ اجلاس میں احتساب بیورو ترمیمی ایکٹ 2017اور کریمینل لاء ترمیمی ایکٹ 2017کی بھی منظوری دے دی گئی ہے احتساب بیورو ترمیمی ایکٹ کے تحت ڈپٹی چیئرمین احتساب بیورو کی آسامی ختم کرنے کی تجویز کی منظوری دے دی گئی ہے جبکہ کریمینل لاء ایکٹ میں ترامیم کے تحت ونی ،سوارہ یا جبری شادی پر قید اور جرمانے کی سزائیں تجویز کی گئی ہیں ونی اور سوارہ کے طور پر شادیوں کی صورت میں 3سے 5سال قید اور 5لاکھ روپے تک جرمانہ ہو سکے گا کسی خاتون کو اس کے شرعی حق سے محروم رکھنے پر قید کے علاوہ 5سے7لاکھ روپے جرمانہ ،جبری شادی پر 3سے 7سال قید اور 5لاکھ روپے جرمانہ ہو گا کریمینل لاء ترمیمی ایکٹ کے تحت کم عمری کی شادی سمیت دیگر غیر شرعی اقدامات پر بھی قیدو جرمانے کی سزا ہو گی ۔کابینہ اجلاس سے خطاب کے دوران وزیراعظم آزادکشمیر راجہ محمد فاروق حیدر خان نے کہا کہ سرکاری آفیسران کے خلاف انکوائریز جلد از جلد مکمل کی جائیں تاکہ قانون کے مطابق سزا اور جزا کا فیصلہ کیا جا سکے انکوائریز پر 2ماہ کے اندر عملدرآمد کر کے رپورٹ پیش کی جائے کابینہ اجلاس میں چیف سیکرٹری کو ہدایت کی گئی کہ وہ آزادکشمیر سے لوڈ شیڈنگ کے خاتمے کے لیے وفاقی وزارت پانی و بجلی سے بات کر کے عوامی مسئلہ ختم کرائیں۔ کابینہ کو بتایا گیا کہ میرپور میں واٹر سپلائی سکیم اور سیوریج سکیم سمیت دیگر منصوبوں کے کنٹریکٹ منسوخ کر دیئے گے ہیں تھرڈ پارٹی ویریفکیشن کے دوران 1ارب 30کروڑ روپے اضافی ادائیگی کا انکشاف ہوا ہے اس سلسلہ میں کمیٹی قائم کر دی گئی ہے جو ملوث افراد کا تعین کرے گی منگلا اپ ریزنگ کے تحت عوامی نوعیت کے منصوبوں کی تکمیل کے لیئے 2.8ارب روپے درکار ہیں واٹر سپلائی کا منصوبہ مکمل نہ ہونے سے میرپور میں پانی کی شدید قلت کا مسئلہ پیدا ہو سکتا ہے وزیراعظم نے کہا کہ میرپور کے عوام نے منگلا ڈیم کے لیئے دو مرتبہ قربانی دی میرپور کے متاثرین کو جملہ سہولیات ہر قیمت پر مہیا کی جائیں گی کنٹریکٹرز کے خلاف ریفرنسزاحتساب بیور و کو ارسال کر دیا گیا ہے ملوث ملازمین کے خلاف ریفرنس بھیجنے کی کارروائی حتمی مرحلے میں ہے جس کو جلد از جلد مکمل کیا جائے۔ میرپور میں واٹر سپلائی سکیم سمیت دیگر منصوبے تین مرتبہ ریوائزڈ ہوئے پی ایم یو بنا اوور بلنگ کے ذریعے ادائیگیاں ہوئیں ریکوری کے لیے ٹھوس اقدامات اٹھائے جا رہے ہیں چور کا گھر تک پیچھا کیا جائے گا مجرمان سے پیسے واپس لے کر انہیں سزا دلوائیں گے میرپور میں ہونے والی کرپشن پر خاموش نہیں رہیں گے خرد برد میں ملوث ہر فرد کے خلاف کارروائی کر کے اسے نشان عبرت بنایا جائے گاوزیراعظم نے ہدایت کی کہ میرپور میں متاثرین منگلا کے منصوبوں میں ہونے والے خردبرد اور نامکمل منصوبوں سے متعلق کیس کو عام کیسز سے ہٹ کر دیکھا جائے گا اور مجرموں کو ہر قیمت پر سزا دلائی جائے کرپشن کرنے والوں کو معاف نہیں کیا جائے گا خواہ وہ کوئی بھی ہو آزادکشمیر میں آٹے پر سبسڈی برقرار رکھی جائے گی اب فوڈ کنٹرولنگ اتھارٹی بن گئی ہے جس سے عوام کو معیاری اشیاء خورد و نوش کی فراہمی ممکن ہو گی وزیراعظم آزادکشمیر نے کہا کہ آزادکشمیر میں ایسے ٹیکسز میں فوری طور پر کمی کی جائے جو پنجاب کی شرح سے زیادہ ہیں پنجاب کے مساوی ٹیکسز کی شرح رکھی جائے وزیراعظم آزادکشمیر نے کہا کہ حکومتی سطح پر اس بات کا فیصلہ ہو گیا ہے کہ وزارت کو اختیار ہے کہ وہ ضروریات کے مطابق ٹرانسفر پالیسی تشکیل دے اور اس حوالے سے تبادلہ جات پر عملدرآمد کرے تاہم پالیسی وزراء نے دینی ہے ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر