آزادکشمیر میں ظالمانہ لوڈشیڈنگ سے کاروبارزندگی مفلوج ہوگیا،مرتضی گیلانی

آزادکشمیر میں ظالمانہ لوڈشیڈنگ سے کاروبارزندگی مفلوج ہوگیا،مرتضی گیلانی

مظفرآباد(بیورورپورٹ)آل جموں وکشمیر مسلم کانفرنس کے مرکزی رہنماؤں سابق وزراء اکرام ، وزیر حکومت پیرسید غلام مرتضیٰ گیلانی نے کہاہے کہ بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ سے نظام زندگی مفلوج اور کاروبار تباہ ہو کر رہ گیا دس سے بارہ گھنٹے کی لوڈشیڈنگ سے عوام کا برا حال کر دیا پاکستان میں لوڈشیڈنگ ختم کرنے کے اعلان کیساتھ ہی آزادکشمیر میں بجلی کی آنکھ مچولی شروع ہو چکی اہلیان مظفرآباد بجلی کی غیر اعلانیہ اور فورس لوڈشیڈنگ کیخلاف ہڑتال کی تیاریاں شروع کردیں ،واپڈا ور برقیات اپنا قبلہ درست کریں اور اس ظالمانہ لوڈشیڈنگ کا فوری نوٹس لیا جائے ورنہ سخت احتجاج اور ہڑتال پر مجبور ہونگے۔انہوں نے کہا کہ غیر اعلانیہ اور فورس لوڈشیڈنگ سے کاروبار مکمل طور پر تباہ ہو چکا ہے کاروباری طبقہ دن بھر بجلی کے انتظار میں گزار دیتا ہے اورشام کو خالی ہاتھ گھر لوٹتا ہے اس طرح کی ظالمانہ اور طویل لوڈشیڈنگ کسی صورت براشت نہیں کریں گے اگر یہی سلسلہ قائم رہا تو ہڑتال پر مجبور ہونگے ۔ وزیراعظم پاکستان کے بجلی لوڈشیڈنگ ختم کرنے کے اعلان کا آزادکشمیر میں کوئی اثر نہیں پڑا۔مظفرآباد میں بالخصوص سابقہ معمول کے مطابق لوڈشیڈنگ کی جارہی ہے۔ہرگھنٹے کے بعد ایک گھنٹے کی لوڈشیڈنگ کے عذاب میں عوام کو مبتلا کیا جاتا ہے ۔انہوں نے کہا کہ جو علاقہ ہزاروں میگاواٹ بجلی پیدا کررہا ہے وہاں بدترین لوڈشیڈنگ کس جواز اور قانون کے تحت کی جارہی ہے ؟جبکہ پاکستان سے لوڈشیڈنگ کے خاتمے کا اعلان کردیا ہے ۔آزادکشمیر کی ساری سیاسی قیادت عوامی مسائل حل کرنے میں ناکام ہوچکی ہے ۔آزادخطہ میں مخلص قیادت کی ضرورت ہے انھوں نے کہا واپڈا کشمیری عوام کے ساتھ سوتیلی ماں جیساسلوک بندکرے۔اگر حکومت نے بجلی لوڈشیڈنگ پر قابو نہیں پایا تو مسلم کانفرنس راست گیر ہڑتال شروع کرے گی جس کی تیاریاں بہت جلد شروع کی جائیں گی۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...