آشنا کے ساتھ مل کر بیوی نے شوہر کو قتل کر دیا اور پھر اپنے محبوب کے منہ پر تیزاب ڈال کر اسے پلاسٹک سرجری کے ذریعے اپنے شوہر جیسا بنانے کیلئے علاج شروع کر دیا لیکن سارا کا سارا بھانڈا ایک کپ مٹن سوپ نے پھوڑ دیا

آشنا کے ساتھ مل کر بیوی نے شوہر کو قتل کر دیا اور پھر اپنے محبوب کے منہ پر ...
آشنا کے ساتھ مل کر بیوی نے شوہر کو قتل کر دیا اور پھر اپنے محبوب کے منہ پر تیزاب ڈال کر اسے پلاسٹک سرجری کے ذریعے اپنے شوہر جیسا بنانے کیلئے علاج شروع کر دیا لیکن سارا کا سارا بھانڈا ایک کپ مٹن سوپ نے پھوڑ دیا

  

ممبئی (ڈیلی پاکستان آن لائن) بھارتی ریاست تلنگانہ کے شہر نگرکرنول میں سواتھی نامی خاتون نے اپنے آشنا راجیش کے ساتھ مل کر شوہر سدھاکر ریڈی کو قتل کر دیااور قتل کرنے کے بعد سدھاکر کی لاش جنگل منتقل کی اور وہاں اسے آگ لگا کر جلا دیا ،خاتون اور اس کا آشان اپنے پلان میں تقریبا کامیاب ہو گئے تھے لیکن ان کا بھانڈا بکرے کے گوشت سے بنے سوپ کے پیالے نے پھوڑ دیا ۔

تفصیلات کے مطابق اس گھناونی واردات کے بعد سواتھی نے راجیش سے کہا کہ وہ پلان کے مطابق اپنے چہرے پر تیزاب ڈال لے۔ سواتھی کی اس فرمائش کی وجہ دراصل یہ تھی کہ وہ سدھاکر کے ساتھ راجیش کو تبدیل کرنا چاہتی تھی۔ وہ سدھاکر کو قتل کرنے کے بعد راجیش کو سدھاکر بنا کر اسے ہمیشہ اپنے ساتھ گھر میں رکھنا چاہتی تھی۔ اس نے راجیش کو چہرے پر تیزاب ڈالنے کو اس لیے کہا تاکہ لوگ اسے پہچان نہ سکیں اور اسے سدھاکر ہی سمجھیں۔منصوبہ یہ تھا کہ اس کے بعد سواتھی اپنے بھائیوں اور رشتہ داروں کو بتائے گی کہ کچھ نامعلوم لوگوں نے سدھاکر کے چہرے پر تیزاب پھینک دیا ہے اور ہم علاج کے لیے حیدرآباد منتقل جا رہے ہیں۔

تاہم ان کا منصوبہ اس وقت ناکام ہو گیا جب راجیش کو ہسپتال کی جانب سے مٹن سوپ پینے کیلئے پیش کیا گیا جو کہ اس حالت کے مریضوں کیلئے انتہائی ضروری ہوتاہے تو اس نے ہسپتال کے ملاز م سے کہا کہ وہ شاکاہاری (Vegetarian) ہے ،ہسپتال انتظامیہ نے جب اس کے گھر والوں کو آگاہ کیا تو ان کےپیروں تلے زمین ہی نکل گئی کیونکہ ریڈی تو شاکاہاری نہیں تھا ۔ریڈی کے گھر والوں نے اپنی اس بے چینی سے متعلق فوری پولیس کو آگاہ کیا جس پر پولیس والوں نے تحقیقات کرتے ہوئے اس شخص سے اس کے خاندان والوں سے متعلق معلومات حاصل کرنے کی کوشش کی لیکن راجیش اس میں ناکام رہا اور بھانڈا پھوٹ گیا ۔

مزید : ڈیلی بائیٹس