انیل کمبلے کے عہدہ چھوڑنے میں کوہلی کا کردار بے نقاب

انیل کمبلے کے عہدہ چھوڑنے میں کوہلی کا کردار بے نقاب

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک)بھارتی کرکٹ بورڈ کی ایڈمنسٹرڈ کمیٹی کی ممبر ڈیانا ایڈلجی کی لیک ای میل نے سابق ہیڈ کوچ انیل کملے کے استعفیٰ میں ویرات کوہلی کے کردار کو بے نقاب کردیا۔کھیلوں کی ویب سائٹ کرک انفو نے اپنی رپورٹ میں بھارتی کرکٹ کی ایڈمنسٹرڈ کمیٹی کی رکن ڈیانا ایڈلجی کی ای میل کی تفصیلات جاری کردیں جس میں انیل کملے کے استعفے کا ذمہ دار کپتان ویرات کوہلی کو قرار دیا گیا ہے۔بھارتی کرکٹ بورڈ کے سابق ہیڈ کوچ انیل کملے نے گزشتہ سال یہ کہہ کر اپنی مدت ملازمت سے قبل استعفیٰ دے دیا تھا کہ ان کی کوچنگ کے انداز سے کپتان ویرات کوہلی مطمئن نہیں تو وہ مزید خدمات انجام نہیں دے سکتے۔انیل کملے کے استعفے کی وجہ ایڈمنسٹرڈ کمیٹی رکن ڈیانا ایڈلجی نے بی سی سی آئی کو بھیجی گئی ای میل میں یہ بتائی کہ ویرات کوہلی کرکٹ بورڈ کے سی ای او راہل جوہری کو انیل کملے سے متعلق مسلسل میسجز بھیجتے تھے جس کی وجہ سے کپتان اور کوچ کے درمیان دوریاں تھیں۔ڈیانا نے ای میل میں مزید کہا کہ انیل کملے کے بعد روی شاستری کو کرکٹ ٹیم کا ہیڈ کوچ بنانے کے لیے بھی قوانین کو پس پشت ڈالا گیا

۔ڈیانا ایڈلجی کے انکشافات ایسے موقع پر سامنے آئے ہیں کہ جب بھارتی وومن ٹیم کی ہیڈ کوچ کے انتخاب کے لیے ونود رائے کو ایڈہاک کمیٹی میں لگایا گیا جس کی انہوں نے مخالفت کی اور ساتھ ہی انہوں نے ویرات کوہلی کی وجہ سے انیل کملے کے استعفے کا ذکر چھیڑا۔ یاد رہے کہ انیل کملے کا بھارتی کرکٹ بورڈ کے ساتھ بطور ہیڈ کوچ 2017 میں ہونے والی چیمپئنز ٹرافی تک معاہدہ تھا تاہم بھارتی ٹیم ابھی انگلینڈ پہنچی نہیں تھی کہ بورڈ کی جانب سے نئے کوچ کا اشتہار جاری کیا گیا۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی