سی این جی اور گیس کا بحران

سی این جی اور گیس کا بحران

پاکستان کے عوام کو حکمرانوں کی طرف سے ہمیشہ حوصلہ اور دلاسہ دیا جاتا ہے، حالات ٹھیک ہو رہے ہیں، فکر نہ کریں لیکن ایسا ہوتا نہیں، عملی طور پر تو یہ صورتِ حال ہے کہ ہر نیا دن ان کے لئے نئے مسائل لے کر آتا ہے۔ یہ مسائل نئے نہیں،بلکہ حقیقت یہ ہے کہ سب پرانے ہیں، سالہا سال سے چلے آ رہے ہیں تاہم ہر مسئلہ اپنے وقت اور سیزن کے لحاظ سے شدت اختیار کرتا ہے۔ گرمی، بارش اور آندھی بجلی کی فراہمی میں تعطل کا ذریعہ بن جاتی ہے،سردی میں گیس کم ملتی ہے اور بحران پیدا ہو جاتا ہے،جبکہ مہنگائی تو اب مقدر بن گئی ہے، یوٹیلٹی سروسز(بجلی+پانی+گیس) کے نرخوں میں اضافہ شہریوں پر بوجھ ہے۔ اس پر طرہ یہ کہ مہنگی ہو کر بھی گیس ملتی نہیں، پانی کے بحران پر عدالت عظمیٰ سرگرم ہے۔ بجلی کی لوڈشیڈنگ اور مرمت کے لئے بندش سردیوں میں بھی جاری ہے، جب استعمال میں بے حد کمی ہو چکی، اِسی طرح سردیاں شروع ہوتے ہی گیس کے دباؤ میں کمی آ گئی تھی اور گھروں کے چولہے ٹھنڈے ہو چکے تھے۔تازہ ترین پریشانی گیس کی ہو گئی ہے۔ متعلقہ حکاّم کے مطابق تکنیکی خرابی اور استعمال بڑھ جانے سے گیس کی قلت پیدا ہو گئی اِس لئے گھریلو صارفین کو پریشانی سے بچانے کے لئے سندھ میں سی این جی سٹیشن غیر معینہ مدت اور پنجاب میں دو دن کے لئے بند کر دیئے گئے۔ صنعتوں کے پاور ہاؤس(بجلی گھر) بھی اس سہولت سے محروم ہو گئے اور اب وہ اپنی پیدا کردہ بجلی کی بجائے سرکاری بجلی استعمال کریں گے،اس سے ایک نیا بحران جنم لے گا اور بجلی کی طلب بڑھ جانے سے لوڈشیڈنگ میں اضافہ ہو جائے گا۔ گیس کی بندش کے باعث کراچی میں ٹرانسپورٹ نہیں چلی اور لوگ سارا دن خوار ہوتے رہے، حیرت کی بات یہ ہے کہ کراچی میں90فیصد ٹرانسپورٹ سی این جی سے چلتی ہے اور جب سی این جی نہ ملی تو ٹرانسپورٹ بند کر دی گئی۔ہم نے تو سابقہ دور میں بجلی کی پیداوار میں دس ہزار میگاواٹ کا اضافہ سنا اور سابقہ حکومت نے گیس کی قلت پر قابو پانے کے لئے قطر سے ایل این جی درآمد کرنے کے معاہدے کئے، کراچی سے اندرون ملک پائپ لائن بچھائی گئی اور کراچی میں ٹرمینل بنا لیا گیا، نہ معلوم اب گیس کہاں چلی گئی۔بہرحال سابقین پر الزام دھرنے سے بہتر عمل تو یہ ہے کہ جس وجہ سے صورتِ حال پیدا ہوئی اُسے فوراً درست کیا جائے اور معمول کے مطابق گیس مہیا کی جائے تاکہ کوئی بحران پیدا نہ ہو، عوام پہلے ہی بہت پریشان ہیں، ان کو مزید کتنی اذیت دی جائے گی۔

مزید : رائے /اداریہ