بیلٹ پیپرز میں ’’نوٹا ‘‘کی آپشن سے متعلق الیکشن کمیشن سے دلائل طلب

بیلٹ پیپرز میں ’’نوٹا ‘‘کی آپشن سے متعلق الیکشن کمیشن سے دلائل طلب

لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائیکورٹ نے بیلٹ پیپرز پر نوٹا (None of the above) کی آپشن شامل کرنے سے متعلق درخواست پر الیکشن کمشن کے وکیل کو آج 13دسمبر کودلائل کے لئے طلب کرلیا۔عدالت نے مقامی شہری محمد وسیم کی درخواست پر سماعت کی ،درخواست گزار کے وکیل نے عدالت کے روبرو موقف اختیار کیا کہ حق رائے دہی ہر شہری کا بنیادی اور جمہوری حق ہے ،بیلٹ پیپرز پر نوٹا کی آپشن نہ ہونے کی وجہ سے ووٹر کے پاس محدود حق رائے دہی رکھتا ہے تاہم ووٹر کو نہ چاہتے ہوئے بھی موجود امیدواروں میں سے کسی ایک کے حق میں ووٹ کاسٹ کرنا پڑتا ہے، درخواست گزار کے وکیل نے نشاندہی کی کہ اگر کوئی بھی امیدوار، پسند نہ ہو تو ووٹر اپنا ووٹ منسوخ کرنے کو ترجیح دیتا ہے ،بھارت سمیت متعدد ممالک میں انتخابات میں نوٹا کی آپشن کا استعمال کیا جاتا ہے ،ووٹر اگر کسی امیدوار کو ووٹ نہ دینا چاہے تو وہ نوٹا پر نشان لگا دیتا ہے ،وکیل کا موقف ہے کہ نوٹا کا آپشن، ہر ووٹر کا بنیادی جمہوری حق ہے ،وکیل نے استدعا کی کہ عدالت الیکشن کمیشن کو بیلٹ پیپرز میں نوٹا کی آپشن شامل کرنے کا حکم دیا جائے۔

نوٹا

مزید : علاقائی