انجمن حمایت اسلام کے 135ویں یوم تاسیس کے حوالے سے تقریب

انجمن حمایت اسلام کے 135ویں یوم تاسیس کے حوالے سے تقریب

  



لاہور(پ ر)برصغیر کے قدیم ترین تعلیمی اور رفاہی ادارے انجمن حمایتِ اسلام کی 135ویں تقریباتِ تاسیس کے سلسلے میں اپرجنک نگر سمن آباد کے گرلز ہائی سکول میں جسٹس (ر) منظور حسین سیال نے اپنے خطبہ صدارت میں کہا کہ 1884میں اہل لاہور نے غریب مسلمانوں کو معاشی ترقی سے ہمکنار کرنے کے لیے دارالشفقت اور تعلیمی ادارے بنائے تو پاک و ہند کے لوگوں نے انجمن حمایتِ اسلام پر یقین کامل کیا، غریب لوگوں نے اپنے بچوں کی روٹی میں سے آٹا، چندہ اور اپنے گھر عطیہ کر دیے، یہی وجہ ہے کہ لاہور میں یتیم بچیوں کے لیے دارالشفقت اور سکول کالجوں کا جال بچھا دیا گیا، آج بھی انجمن کے عہدیدار اور سکول کمیٹی کے چیئرمین خواجہ سہیل محمود بٹ اور سیکرٹری رفیع رضا کھرل انتھک کام انجام دے رہے ہیں۔ میاں امجد اقبال نے کہا کہ حمایتِ اسلام پاشاگرلز ہائی سکول کے بچوں کے لیے پارک اور سٹریٹ لائٹس مہیا کرنے کے علاوہ سڑک بھی بنوائیں گے۔ سیکرٹری جنرل انجمن میاں محمد منیر نے کہا کہ قائداعظم انجمن کے زیرانتظام اسلامیہ کالج میں 17مرتبہ تشریف لائے اور تحریک پاکستان میں انجمن حمایتِ اسلام کے طلبہ نے اہم کردار ادا کیا تھا۔ انجمن کے 135ویں تاسیس کے حوالے سے خواجہ سہیل محمود بٹ، ممتاز ڈراما نگار ادیبہ مسرت کلانچوی،رفیع رضا کھرل اور فرح جبین نے بھی خطاب کیا۔ ابرار ہاشمی کامیڈین اور طلبہ و طالبات نے ڈراما، ٹیبلو اور کلامِ اقبال پیش کیا۔ سیکڑوں شرکا کے علاوہ مہمانانِ خصوصی ڈاکٹر حبیب الرحمن، ڈاکٹر راشد امجد چودھری، میاں خورشید انور، میاں امجد علی، ڈاکٹر فاروق احمد، جسٹس (ر) سید سخی حسین بخاری اور ڈاکٹر محمد شفیق بھی شامل تھے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...