64کنال اراضی پر صنعتوں کے زہر یلے مواد سے اگائی جانے والی سبزیاں تلف

  64کنال اراضی پر صنعتوں کے زہر یلے مواد سے اگائی جانے والی سبزیاں تلف

  



لاہور(سٹی رپورٹر)ڈائریکٹر جنرل پنجاب فوڈ اتھارٹی عرفان میمن کی سربراہی میں فوڈ سیفٹی ٹیموں نے زہریلے انڈسٹریل ویسٹ اور سیوریج کے پانی سے اُگائی گئی سبزیوں کیخلاف کریک ڈاؤن کیا۔تفصیلات کے مطابق ڈی جی فوڈ اتھارٹی کی سربراہی میں لاہور کے علاقے سادے وال میں 64کنال گندے پانی سے اُگائی گئی سبزیاں تلف کردی گئیں۔اس حوالے سے ڈی جی فوڈ اتھارٹی کا کہنا ہے کہ زہریلے پانی سے اُگی سبزیوں میں شامل زہریلے مادے خوراک کا حصہ بن کر متعدد موذی بیماریوں کا سبب بنتے ہیں۔انڈسٹریل ویسٹ اور سیوریج کے پانی سے صرف آؤٹ ڈور پلانٹس، پٹ سن اور دیگر ڈیکوریشن پلانٹس اگائے جاسکتے ہیں۔ جن علاقوں میں نہری یا ٹیوب ویل کا پانی دستیاب نہیں وہاں صرف غیر خوردنی فصلیں اگا ئیں۔غیر خوردنی فصلوں میں بانس، پٹ سن، ان ڈور پلانٹس، نمائشی پھول سمیت متعدد فصلیں شامل ہیں۔عرفان میمن کا مزید کہناتھا کہ گزشتہ سال کی نسبت اس سال زیادہ تر علاقوں میں سبزیاں نہری یا ٹیوب ویل کے پانی سے اگائی جا رہی ہیں۔

انہوں نے واضح کیا کہ کھیت سے پلیٹ تک محفوظ خوراک کی یقینی فراہمی کے لیے ہر سطح پر کڑی نگرانی کی جا رہی ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...