سوات: وکیل کے قتل کیخلاف وکلاء کا عدالتی بائیکاٹ

سوات: وکیل کے قتل کیخلاف وکلاء کا عدالتی بائیکاٹ

  



پشاور(نیوزرپورٹر) بارکونسل خیبرپختونخوا کی کال پر سوات میں وکیل کو قتل کرنے کے خلاف وکلا ء نے جمعرات کے روز عدالتوں سے بائیکاٹ کیااور حکومت سے ساتھی وکیل کے قتل میں ملوث ملزمان کو فوری طور پر گرفتار کرکے انہیں قرارواقعی سزا دینے کا مطالبہ، اس سے قبل بھی وکلاء نے ضابطہ دیوانی میں ترامیم کیخلاف مسلسل تین روز تک ہڑتال کی جس کیوجہ سے عدالتی امور بری طرح متاثر ہوئے اورکیسزکی سماعت کیلئے تاریخیں بدلنے سے عدالتوں کو آنے والے سائلین کوبھی سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑا، خیبر پختونخوا بار کونسل کیجانب سے سوات میں فیروزشاہ خان ایڈوکیٹ کوقتل کرنے کے خلاف گزشتہ روز پشاورہائی کورٹ اورماتحت عدالتوں سے بائیکاٹ کیا گیا اور کوئی بھی وکیل عدالت میں پیش نہیں ہوا جس کی وجہ سے کیسز پر کوئی پیش رفت نہ ہوسکی جس کے باعث درخواست گزاروں کوبھی مایوس لوٹنا پڑا۔بارکونسل نے صوبائی حکومت سے وکلاء کو تحفظ فراہم کرنے اورواقعہ میں ملوث افراد کی فوری گرفتاری عمل میں لانے کا مطالبہ کیا، جمعرات کے روز ہونے والے ہڑتال کے علاوہ وکلاء نے ضابطہ دیوانی ایکٹ میں ترمیم کیخلاف 9سے 11دسمبر تک عدالتی بائیکاٹ کیا جس سے عدالتی امور ٹھپ ہوکر رہ گئے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...