سخاکوٹ، جمعیت کا پلان سی کے بعد ڈویژ ن کی سطح پر مظاہر وں کا اعلان

سخاکوٹ، جمعیت کا پلان سی کے بعد ڈویژ ن کی سطح پر مظاہر وں کا اعلان

  



سخاکوٹ(نمائندہ پاکستان)جمعیت علماء ملاکنڈپلان سی کے بعد ڈویژن کے سطع پر احتجاجی مظاہرے کرنے کا اعلان کردیا۔ 2020نئے انتخابات کا سال ہے اور انشاء اللہ آئندہ انتخابات میں جمعیت علماء اسلام بھاری اکثریت سے کامیابی حاصل کریگی۔ جمعیت علماء اسلام کی آزادی مارچ اور دھرنا مخالفین کے اعصاب پر سوار ہوچکا ہے اور انشاء اللہ بہت جلد سلیکٹڈ حکمرانوں سے عوام کو نجات مل جائیگی۔ ان خیالات کا اظہار جمعیت علماء اسلام ملاکنڈ کے مجلس عاملہ کے اجلاس جوکہ حجرہ فقیر آباد سخاکوٹ خاص میں زیر صدارت ضلعی آمیر مفتی کفایت اللہ منعقد ہوا کے دوران کیا گیا جس میں ضلعی جنرل سیکرٹری مولانا سلمان تاثیر خان، ضلعی سیکرٹری اطلاعات فضل وہاب، سینئر نائب آمیر مولانا فضل اللہ شاہ، سید محمد ناصر باچہ، حکیم زادہ، ضلعی فنانس سیکرٹری فضل حق اور سرپرست اعلیٰ مولانا ضیاء الرحمان سمیت دیگر ممبران ضلعی مجلس عاملہ نے شرکت کی اور خطاب کیا۔اس موقع پر ناروے میں قرآن پاک کی بے حرمتی پر حکومت پاکستان اور اسلامی ممالک سے مطالبہ کیا گیا کہ ناروے کیساتھ سفارتی تعلقات ختم کئے جائیں اور ناروے کیساتھ مکمل بائیکاٹ کریں۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ضلعی آمیر مفتی کفایت اللہ اور مولانا سلمان تاثیر خان نے کہا کہ پی ٹی آئی نے الیکشن سے قبل عوام کو جو سبز باغ دکھا کر جھوٹے وعدے کئے تھے اقتدار میں آنے کے بعد سب کچھ بھول گئے ہیں اور تبدیلی صرف وزراء، ممبران اسمبلی اور سنیٹروں کے حجروں تک محدود ہے جبکہ عام آدمی مہنگائی، بے روزگاری، بد آمنی اور بے انتظامی کی چکی میں پھس رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ملاکنڈ میں منشیات کے بڑھتے ہوئے دھندے سے نوجوان نسل تباہی کے دہانے پر پہنچ گئے ہیں جبکہ مہنگائی نے غریب عوام کی کمر توڑ دی ہے۔ اس موقع پر آزادی مارچ میں بھر پور شرکت پر یونین کونسلوں عہدیداروں، ضلعی و تحصیل عہدیداروں اور کارکنوں کا شکریہ ادا کیا۔ اجلاس کے موقع پر بلدیاتی انتخابات اور عام انتخابات میں بھر پور حصہ لینے کا فیصلہ کیا گیا اور ضلعی جنرل سیکرٹری نے کہا کہ بلدیاتی اور عام انتخابات میں مقامی اُمیدوار کھڑے کئے جائینگے اور انشاء اللہ بھر پور کامیابی حاصل کرینگے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر