سردی کی شدت میں اضافے کے ساتھ ہی گیس بندش شروع

  سردی کی شدت میں اضافے کے ساتھ ہی گیس بندش شروع

  



ملتان (سٹاف رپورٹر) ملتان اور گردونواح میں سوئی گیس کی لوڈشیڈنگ کا بحران بدترین ہو گیا۔صارفین اذیت میں مبتلا ہو گئے‘ گزشتہ روز بارش کے باعث سردی بڑھنے پر کئی علاقوں میں سوئی گیس نام کو نہ رہی۔تفصیل کے مطابق ہر سال سردیوں میں سوئی گیس کا بحران درپیش ہوتا ہے۔ مختلف(بقیہ نمبر49صفحہ7پر)

علاقوں میں موسم سرما میں سوئی گیس نام کو بھی نہیں ہوتی جہاں کے مکین ایل پی جی اور لکڑی استعمال کرنے پر مجبور ہوجاتے ہیں۔اس سال بھی دسمبر میں سوئی گیس کی طویل لوڈشیڈنگ شروع ہو چکی ہے۔ کئی علاقوں میں گیس کا پریشر نہ ہونے کے برابر ہے۔ ملتان میں ثمن آباد‘ گلبرگ کالونی‘مومن آباد‘ شریف پورہ‘ اسلام پورہ‘عرفات کالونی‘ لوہار کالونی‘ ناظم آباد‘ معصوم شاہ روڈ‘ جان محمد کالونی‘محمود آباد اوردیگر علاقوں میں سوئی گیس کی بدترین لوڈشیڈنگ کی جا رہی ہے۔ سوئی گیس صبح ہوتی ہے نہ رات کو ہوتی ہے۔ گزشتہ روز بارش ہونے کے باعث سردی بڑھ گئی جس سے بیشتر علاقوں میں سوئی گیس نام کو نہ رہی اور مکینوں کو شدید پریشانی کا سامنا رہا‘ اس صورتحال کا ناجائز فائدہ ایل پی جی کے دکانداروں نے اٹھایا جوقیمت بڑھا کر 130روپے فی کلو تک فروخت کرتے رہے۔ دوسری جانب بتایا گیا ہے کہ سوئی گیس اہلکار وں نے رشوت لے کر کمرشل کنکشن والے علاقوں کا پریشر بڑھا دیا ہے جس کی بنا پر ہوٹل والوں سمیت گیس کا کمرشل استعمال کرنے والوں کا پریشر پورا ہے۔ دریں اثنا بارش کے باعث جنوبی پنجاب کے مختلف فیڈرز ٹرپ کر گئے اور بجلی کی فراہمی بند ہو گئی۔ متعدد میٹرز بھی جل گئے جس کے باعث صارفین کو پریشانی کا سامنا کرنا پڑا۔

گیس بحران

مزید : ملتان صفحہ آخر